عمران خان کا دورہ واشنگٹن سبوتاژ کرنے کی تیاری

واشنگٹن(سٹیٹ ویوز) وزیراعظم عمران خان کے دورہ امریکہ کو ثبوتاژ کرنے کےلئے پاکستان کے اندر اوربیرون ممالک ہائیر کی گئی لابیز اور قیادیانی متحرک ہوچکی ہیں.جبکہ قادیانیوں کے اہم رہنمائوں نے اس حوالے سے امریکی صدر ٹرمپ سے ملاقاتیں بھی کیں.

ذرائع کے مطابق بلاول بھٹو بھی اسی ہفتے عمران خان کے دورہ سے قبل واشنگٹن پہنچ رہے ہیں اوربلاول کے کے دورہ کے شیڈول کا انچارج حسین حقانی ہے۔

یہ بھی معلوم ہوا ہے کہ گزشتہ دنوں سابق صدر آصف زرداری نے بذریعہ فون حسین حقانی کو واشنگٹن میں بلاول کے حق میں لابنگ کرنے اوردیگر لابی فرموں سے رابطے پیدا کرنے کا ٹاسک سونپ رکھا ہے جس کے بعد وہ اندرون خانہ سرگرم ہوگئے ہیں۔

ذرائع نے انکشاف کیا ہے کہ امریکی ذرائع ابلاغ کے اداروں اورٹرمپ انتظامیہ میں شامل بھارتی امریکنز کے چونکہ حقانی کےساتھ گہرے روابط ہیں اس لئے ایک منظم منصوبے کے تحت عمران حکومت اورپاکستانی اداروں کو متنازعہ بنانے کےلئے بلاول بھٹو کو اب حسین حقانی کی سرپرستی میں واشنگٹن میں لانچ کرنے کے تمام انتظامات کرلئے ہیں ۔

ذرائع نے بتایا کہ عمران خان کا دورہ واشنگٹن اس لحاظ سے بھی بہت اہم ہے کہ ان کےساتھ ملٹری اسٹیبلشمنٹ کے کئی اہم عہدیدران کے علاقہ پاکستان کی خفیہ ایجنسی آئی ایس آئی کے سربراہ لیفٹیننٹ جنرل فیض حمید بھی امریکہ جارہے ہیں۔ پاکستانی ملٹری اسٹیبلشمنٹ کے عہدیداران اورپینٹاگان حکام میں کئی اہم ملاقاتیں متوقع ہیں۔

امریکی ملٹری کے کئی جرنلز نے وائٹ ہائوس کو کہا ہےکہ پاکستان کے ساتھ ملٹری تعلقات کا از سرنو جائزہ لیا جائےگا۔ ماہرین کا کہنا ہے کہ عمران خان خالی ہاتھ واپس نہیں جائیں گے کیونکہ اس خطے میں امریکی فوکس بلاول یا شریف خاندان نہیں ۔ امریکی انتظامیہ سمجھ چکی ہے کہ عمران حکومت اوردیگر ادارے ایک پیج پر ہیں اوریہی قوت ان کو افغانستان سے باعزت نکال سکتی ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں