ترجمان وزیر اعلیٰ پنجاب شہباز گل اور مریم نواز کی ٹویٹر پر نوک جھوک

لاہور (ویب ڈیسک) مسلم لیگ ن کی نائب صدر مریم نواز کی جانب سے وزیر اعظم عمران خان کے دورہ امریکہ پر تنقید کی گئی تو ترجمان وزیر اعلیٰ پنجاب شہباز گل نے انہیں کھری کھری سنادیں۔اپنے ایک ٹویٹ میں مریم نواز نے کہا کہ سلیکٹڈ بھی امریکہ کے وفد میں شامل ہے نا ؟ عوام کا وزیر اعظم وہ آپ ہی کے والد تھے نا جو ناک صاف کرنے کے بعد وہی رومال اپنے منہ پر مل لیتے تھے۔ جو مٹھائی کا ڈبہ لے کر جنرل جیلانی کے دفتر کے باہر کھڑے رہتے تھے۔ اس بار وہ امریکہ نہیں گئے بلکہ عمران خان گیا ہے۔

جو آپ کے ولد کا بھی ہیرو تھا۔ اور آپ کا بھی۔ میری بہن محنت کر حسد نا کر ہوتا تو وفد کا سربراہ بن کے وفد کو لیڈ کرتا! جینا ذلت سے ہو تو مرنا اچھا ! ایسے اقتدار سے قید اچھی! اب تو سکھا پڑھا کر سامنے بٹھا دینے کے دن بھی گئے۔ دنیا بھی جانتی ہے کہ سلیکٹڈ سے بات کرنے کا فائدہ نہیں ہے کیونکہ اس کی حیثیت ایک کٹھ پتلی سے زیادہ کچھ نہیں۔مریم نواز کے اس ٹویٹ کے جواب میں شہباز گل نے بھی ٹوئٹر کے ذریعے وار کیا اور انہیں کہا ’ وہ آپ ہی کے والد تھے نا جو ناک صاف کرنے کے بعد وہی رومال اپنے منہ پر مل لیتے تھے، جو مٹھائی کا ڈبہ لے کر جنرل جیلانی کے دفتر کے باہر کھڑے رہتے تھے-

اس بار وہ امریکہ نہیں گئے بلکہ عمران خان گیا ہے جو آپ کے والد کا بھی ہیرو تھا اور آپ کا بھی، میری بہن محنت کر حسد نا کر۔‘ جبکہ دوسری جانب ایک خبر کے مطابق تحریک انصاف کے رکن صوبائی اسمبلی حلیم عادل شیخ کی ویڈیو انٹرنیٹ پر وائرل ہو گئی جس میں وہ فخریہ انداز میں اپنی جماعت کو ”سریے والا سیٹھ “متعارف کروا رہے ہیں ۔ویڈیو میں دیکھا جا سکتا ہے کہ حلیم عادل شیخ اپنے ساتھی اور سندھ میں انسانی حقوق کے فوکل پرسن میر افتخار احمد کو ”سریے والا سیٹھ “کہہ کر پکار رہے ہیں ۔

ویڈیو میں دیکھا جا سکتا ہے کہ حلیم عادل شیخ اپوزیشن ارکان پر تنقید کرتے ہوئے کہہ رہے ہیں کہ ”ان کے لیے غریب اہمیت نہیں رکھتے،غریب کا بچہ ،بچی اور ما ں کچھ نہیں بلکہ ان کا اپنا نظام ہے،یہ لوگ ڈنڈے سے باز آتے ہیں ،ان کے لیے ہم نے سریے والا سیٹھ رکھا ہے “۔حلیم عادل شیخ نے میر افتخار احمد کا ہاتھ پکڑ کر یہ بات کی اور پھر کمرہ قہقوں سے گونج اٹھا ،حلیم عادل شیخ اور میر افتخار احمد نے بھی ہنس کر بات سے لطف اندوز ہو ئے ۔

واضح رہے کہ گزشتہ ماہ میر افتخار احمد انسانی حقوق کے فوکل پرسن تعینات ہوئے اور ان سے متعلق سوشل میڈ یا پر خوب بحث ہوئی تھی کہ انہوں نے اپنے ڈرائیور کے مقعد میں سریا گھسا دیا تھا ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں