Sharjeel Khan

شرجیل خان کی سزا ختم ہونے میں چند روز باقی

لاہور (نیوزڈیسک) شرجیل خان کی سزا ختم ہونے میں چند روز باقی، تاہم جلد قومی ٹیم میں واپسی کا امکان نہیں، جارح مزاج بلے باز کو قومی ٹیم میں واپسی کیلئے بحالی پروگرام سے گزرناہو گا، جبکہ عوامی سطح پر اعتراف جرم بھی کرنا ہوگا۔ تفصیلات کے مطابق بدنام زمانہ پاکستان سپر لیگ اسپاٹ فکسنگ اسکینڈل کے مرکزی کردار شرجیل خان کی پابندی اگلے ماہ 10 اگست کو ختم ہوجائے گی۔

شائقین کرکٹ اب سوال کا جواب ڈھونڈ رہے ہیں کہ آیا شرجیل خان جلد پاکستانی ٹیم کا حصہ بن سکتے ہیں یا نہیں۔ اس حوالے سے بتایا گیا ہے کہ کرکٹ میں واپسی کے لیے جارح بلےباز شرجیل خان کو بحالی پروگرام سے گزرنا ہو گا۔ پی ایس ایل فکسنگ اسکینڈل کے مرکزی کردار شرجیل خان کی پابندی 10 اگست کو ختم تو ہوجائے گی تاہم اس کے باوجود ان کی بین الاقوامی کرکٹ میں جلد واپسی کا کوئی امکان نہیں ہے۔

پابندی ختم ہونے کے باوجود کرکٹ میں واپسی کے لئے شرجیل خان کو کرکٹ میں واپسی سے پہلے عوامی سطح پر اعتراف جرم کرنا ہوگا۔ اعتراف جرم کرنے کے بعد شرجیل خان کو بحالی پروگرام سے بھی گزرنا ہوگا۔ تاہم شرجیل خان نے تاحال بحالی پروگرام کے لئے پاکستان کرکٹ بورڈ سے رابطہ نہیں کیا۔ ترجمان پی سی بی کے مطابق شرجیل خان کے بحالی پروگرام میں حصہ لینے کے لئے رابطہ کرنے کے بعد پی سی بی انٹی کرپشن یونٹ کرکٹر کا ری ہیب پروگرام ائین کی شق 6.7 کے مطابق تیار کر ے گا۔

دوسری طرف شرجیل خان کے وکیل شیغان اعجاز کا کہنا تھا کہ بحالی پروگرام کے لیے جلد پی سی بی سے رابطہ کریں گے۔ کوشش ہے کہ شرجیل خان ڈومیسٹک سیزن میں شرکت کرکے کرکٹ میں واپسی کا اغاز کریں۔ واضح رہے اسپاٹ فکسنگ کیس میں شرجیل خان پر ڈھائی برس کی پابندی عائد کی گئی تھی۔ شرجیل خان پر عائد پابندی عدالت کی جانب سے بھی برقرار رکھی گئی۔ تاہم تمام تر شواہد سامنے آنے کے باوجود شرجیل خان نے آج تک اعتراف جرم نہیں کیا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں