ایف بی آر کوبیرون ملک پاکستانیوں کے اربوں ڈالرز کا سراغ مل گیا

اسلام آباد( سٹیٹ ویوز) ایف بی آرکوبیرون ملک پاکستانیوں کے سات سے آٹھ ارب ڈالرز کاسراغ مل گیا، صرف 378 لوگوں کے پاس پانچ ارب ڈالرزموجود ہیں۔

تفصیلات کے مطابق قومی اسمبلی کی قائمہ کمیٹی خزانہ کے اجلاس کے دوران ایف بی آر نے بتایا کہ ایف بی آر 2018 میں 28 ممالک کے ساتھ ٹیکس معلومات کا تبادلہ کیا گیا ہے۔

57 ہزار 450 پاکستانیوں کے آف شور اکاؤنٹس کا ڈیٹا مل چکا ہے، ان میں سے 378 افراد کے اکاؤنٹ میں پانچ ارب ڈالرز سے زیادہ سرمایہ موجود ہے، ان میں سے 325 افراد کے کیسز آف شور کمشنرز کو بھیجے گئے ہیں تاہم مجموعی طور پر 1227 افراد کا ڈیٹا اور ریکارڈ تلاش کیا جا رہا ہے۔

چئیرمین ایف بی آر شبر زیدی کا کہنا تھا کہ پاکستانیوں کے بیرون ممالک میں سات سے آٹھ ارب ڈالر کا پتہ لگا لیا ہے،اسد عمر نے کہا کہ 247 افراد نے ٹیکس ایمنسٹی حاصل نہیں کی ہے اگر ان لوگوں نے اثاثے ظاہر نہ کئے تو کارروائی ہوگی۔۔

ایف بی آر ان افراد کیخلاف 30 اکتوبر تک کارروائی مکمل کر لے گا۔ ایف بی آر حکام کا کہنا تھاکہ بیرون ملک آف شور اکاؤنٹس رکھنے والے 115 افراد نے 2018 جبکہ 72 نے 2019 میں ٹیکس ایمنسٹی اسکیم حاصل کرلی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں