دو چٹانوں کے درمیان بری طرح پھنسے شخص کو 4 دن بعد زندہ نکال لیا گیا

پنوم پن(نیوزڈیسک) کمبوڈیا میں دو چٹانوں کے درمیان تنگ خلا میں گر کر پھنس جانے والے شخص کو 4 دن بعد 200 ریسکیو اہل کاروں نے انتھک محنت کے بعد زندہ نکال لیا۔

بین الاقوامی خبر رساں ادارے کے مطابق کمبوڈیا میں ایک شخص تنگ و تاریک پہاڑی علاقے کے ایک غار میں چمگاڈر کا فضلہ جمع کررہا تھا کہ اس کی ٹارچ دو چٹانوں کے درمیان باریک سے خلا میں گرگئی جسے نکالنے کے دوران پاؤں پھسل جانے کے باعث وہ چٹانوں کے درمیان گر کر پھنس گیا۔

28 سالہ بورا نے تنگ دراڑ سے نکلنے کی کوشش کی تو اس کا جسم مزید تنگ جگہ میں پھنستا چلا گیا یہاں تک کے اسے سانس لینے میں دقت محسوس ہونے لگی، مذکورہ شخص نے اپنی مدد کے لیے آوازیں لگائیں لیکن کوئی اس کی صدا سننے کے لیے موجود نہیں تھا۔

خوش قسمتی سے مذکورہ شخص کے اہل خانہ اسے ڈھونڈتے ہوئے جائے وقوع تک پہنچ گئے اور ریسکیو ادارے کو طلب کیا، 200 اہلکاروں نے 10 گھنٹے کی انتھک محنت کے بعد بورا کو زندہ حالت میں نکالنے میں کامیاب ہوگئے تاہم 4 دن تک بھوکا پیاسا رہنے کے باعث وہ شدید نقاہت کا شکار تھا۔

بورا کو قریبی اسپتال منتقل کر دیا گیا، اُسے سر، گھٹنوں اور سینے میں شدید چوٹیں آئی ہیں، کمبوڈیا کے وزیراعظم نے بورا کے خاندان کے لیے ڈھائی ہزار ڈالر امداد کا بھی اعلان کیا ہے۔ معیاری کھاد بنانے میں استعمال ہونے والے چمگاڈر کے فضلے کی تلاش میں کافی لوگ نقصان اُٹھاتے ہیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں