وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے آزادکشمیر میں کھڑے ہو کر بھارت کو للکار دیا

مظفرآباد(سٹیٹ ویوز)وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی نے کوہالہ آزاد کشمیر میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ آج میرا یہاں آزاد کشمیر آنے کا مقصد کشمیریوں سے اظہار یکجہتی کرنا ہے اور یہ پیغام دنیا کو دینا ہے کشمیر ہم سے اور ہم کشمیر سے جدا نہیں۔

شاہ محمود نے کہا کہ مقبوضہ کشمیر میں ظلم کی داستان اتنی طویل ہے کہ بیان نہیں ہو سکتی لیکن حوصلے ہمارے چٹان کی طرح ہیں۔ہندوستان دو شقوں کو منسوخ کر کے اس تاریخ کو بدل نہیں سکتا۔

شلہ محمود نے کہا کہ کشمیر کے حوالے سے مشترکہ پارلیمنٹ کے اجلاس میں ،میں نے کشمیر بنے گا پاکستان کا نعرہ بلند کیا۔ آج اس تاریخی جگہ کوہالہ پل پر اس عزم کے اظہار کے لیے حاضر ہوا ہوں اور کل میں عیدالاضحی کشمیریوں کے ساتھ یکجہتی کیلئے مظفرآباد میں مناؤں گا۔

وزیر اعظم عمران خان 14 اگست کو مظفرآباد آئیں گے اور کشمیر اسمبلی سے خطاب کریں گے۔انہوں نے کہا کہ بھارت میں مودی سرکار نے ایک حرکت سے اسے بین الاقوامی تنازعہ بنا دیا ہے۔

آج پوری دنیا میں بشمول لندن۔ برسلز جہاں جہاں انسانیت سے محبت کرنے والے لوگ ہیں وہ مقبوضہ جموں و کشمیر کے مظلوموں کیلئے سڑکوں پر احتجاج کر رہے ہیں۔

یاد رہے کہ وزیر خارجہ اپنے دورہء آزاد کشمیر کے دوران مظفرآباد آزاد کشمیر میں مقبوضہ جموں و کشمیر کے پناہ گزینوں کے کیمپ جائیں گے۔ وزیر خارجہ آزاد کشمیر کے صدر اور وزیر اعظم سے ملاقاتیں کریں گے اور مقبوضہ جموں و کشمیر میں جاری بھارتی مظالم کو میڈیا کے ذریعے اجاگر کریں گے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں