پیپلز پارٹی میں فاورڈ بلاک کی خبریں

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) سندھ میں چند عرصے سے پیپلز پارٹی کے اندر فارورڈ بلاک بنانے کی خبریں سامنے آ رہی ہیں، اب فارورڈ بلاک بنانے کے معاملے پر سپیکر سندھ اسمبلی آغا سراج درانی کے ملوث ہونے کا انکشاف ہوا ہے۔ دنیا نیوز کے ذرائع کے مطابق فارور بلاک کے لئے سپیکر سندھ اسمبلی آغا سراج درانی کے خود ملوث ہونے کا انکشاف ہوا ہے-

مسلسل نیب تحویل میں رہنے کے دوران سپیکر نے اپنی ہی پارٹی حکومت کے خلاف کام شروع کیا، آغا سراج نے اپنی جماعت کے ایک درجن سے زائد ایم پی ایز سے ملاقات کی۔ ذرائع کے مطابق ملاقات میں سپیکر نے صوبائی اسمبلی کے ارکان کو قائد ایوان کی تبدیلی پر قائل کرنے کی کوشش بھی کی، سپیکر سندھ اسمبلی نے ایسے ارکان سے رابطہ کیا جو پارٹی اور سندھ حکومت سے نالاں تھے۔

ذرائع کے مطابق سراج درانی کے روابط کا راز فاش ہونے پر پیپلز پارٹی کے چیئر مین بلاول بھٹو زرداری نے سخت نوٹس لے لیا۔ذرائع کے مطابق پارٹی کی ایم پی ایز سے ملاقاتوں کے بعد ارکان نے ساری بات پارٹی چیئرمین بلاول بھٹو زرداری کے سامنے رکھ دی، پیپلزپارٹی چیئرمین راز فاش ہونے کے بعد شدید ناراض ہو گئے ہیں ۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ پارٹی کی جانب سے کسی بھی کارروائی کا فیصلہ بلاول بھٹو کی جانب سے وطن واپسی پر ہو گا-

فوری طور پر آغا سراج درانی کے خلاف کارروائی کا امکان نہیں۔پارٹی ذرائع کے مطابق پیپلز پارٹی پہلے ہی مشکل حالات سے گزر رہی ہے، چیئرمین بلاول بھٹو زرداری وطن واپسی پر اس سلسلے میں مشاورت کریں گے۔ دوسری جانب ایک خبر کےمطابق وفاقی وزیرِ ریلوے شیخ رشید نے کہا ہے کہ عمران خان نے انہیں مخاطب کر کے کہا ہے کہ جب تک وہ وزیرِ اعظم ہیں، تب تک عثمان بزدار وزیرِ اعلیٰ پنجاب رہیں گے۔

وفاقی وزیر ریلوے شیخ رشید خصوصی ٹرین سے ڈی جی خان پہنچے جہاں تقریب سے خطاب کرتے ہوئے شیخ رشید نے کہا کہ آصف زرداری کے دوست پلی بارگین کے لیے پیسہ جمع کر نا شروع کرچکے ہیں، امید ہے کہ محرم الحرام کے بعد نواز شریف بھی پیسے دیں گے۔

انہوں نے کہا کہ عمران خان کا سارا زور 27 ستمبر کی تقریر پر مرکوز ہے حالانکہ اقوام متحدہ نے ہمیں کچھ نہیں دینا، کشمیر کے لیے قوم کا بچہ بچہ قربانی دینے کے لیے تیار ہے۔ شیخ رشید نے کہا کہ سورج مشرق کے بجائے مغرب سے بھی طلوع ہو جائے لیکن عمران خان کسی کو این آر او نہیں دینے والے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں