مودی کا انجام برا ہوگا، وزیراعظم عمران خان،کشمیری نوجوانوں کو کنٹرول لائن کراس کرنے سے روک دیا

مظفرآباد(سٹیٹ ویوز)وزیراعظم عمران خان کا کہنا ہے کہ بھارتی وزیراعظم نریندر مودی کشمیریوں پر جتنا بھی ظلم کر لے وہ کبھی کامیاب نہیں ہو گااس کا انجام برا ہوگا۔

آزاد کشمیر کے دارالحکومت مظفر آباد میں جلسے سے خطاب کرتے ہوئے عمران خان کا کہنا تھا کہ میں نے جب دنیا میں کشمیر کا سفیر بننے کا فیصلہ اس لیے کیا کہ میں ایک پاکستانی، ایک مسلمان اور ایک انسان ہوں، کشمیر کا مسئلہ انسانیت کا مسئلہ ہے، 40 دنوں سے ہمارے کشمیری، بھائی، بہنیں اور بچے جیل میں قید ہیں۔

انہوں نے کہا خاص طور پر نریندر مودی کو پیغام دینا چاہتا ہوں کہ ایک بزدل انسان صرف ایسا ظلم کرتا ہے جو آج کشمیریوں پر بھارتی فوج کر رہی ہے، مودی جس میں انسانیت ہوتی ہے وہ کبھی ایسا نہیں کر سکتا جو نریندر مودی اور آر ایس ایس کر رہی ہے، بہادر انسان کبھی بھی عورتوں اور بچوں پر ظلم نہیں کرتا۔

وزیراعظم نے کہا کہ ساری دنیا میں کشمیر کا سفیر بن کر جاؤں گا اور دنیا کو بتاؤں گا، آرایس ایس کے بانی ہٹلر کو اپنا ہیرو مانتے تھے، آرایس ایس وہ جماعت ہے جس میں مسلمانوں کے خلاف نفرت بھری ہے، بھارت میں اقلیتوں کو برابر کا شہری نہیں سمجھا جاتا تاہم نریندر مودی تم کشمیریوں کو شکست نہیں دے سکتے، جس طرح ہٹلر نے ظلم کیا اسی طرح یہ بھی ظلم کر رہے ہیں اور اب وہ ہندوستان بننے جارہا ہے جو نہ نہرو چاہتا تھا نہ گاندھی چاہتے تھے۔

وزیراعظم کا کہنا تھا کہ 50 سال بعد سلامتی کونسل میں کشمیرکی بات ہوئی، 58 ملکوں نے پاکستان کے موقف کی حمایت کی، او آئی سی نے کہا کہ بھارت مقبوضہ کشمیر میں جاری کرفیو ختم کرے، آئندہ ہفتے نیویارک میں جنرل اسمبلی کے اجلاس میں مسئلہ کشمیر پر بات کروں گا۔ ان کا کہنا تھا کہ کہا کہ کشمیر کا مسئلہ بین الاقوامی مسئلہ بن چکا ہے، پوری دنیا کے سوا ارب مسلمان آج کشمیر کی طرف دیکھ رہے ہیں۔

وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ پاکستان نے بھارت کا جہاز گرایا،پائلٹ واپس بھجوانے پر مودی نے کہا دیکھو پاکستان ڈرگیا ہے، مودی کان کھول کر سن لو ایمان والا موت سے نہیں ڈرتا، بھارت کاپائلٹ ڈر کر نہیں امن کے لیے واپس کیا۔

وزیراعظم کا کہنا تھا کہ سنا ہے کہ نوجوان کنٹرول لائن توڑنا چاہتے ہیں میں ان نوجوانوں کو پیغام دیتا ہوں کہ اقوام متحدہ میں دنیا کے سامنے بھارتی جارحیت اورمسئلہ کشمیر کا معاملہ پیش کرونگا اگر دنیا اس پر پھر بھی خاموش رہی تو پھر میرے حکم کا انتظار کریں ..ملکر کنٹرول لائن عبور کریں گے. کشمیریوں پر جو ظلم ہو رہا ہے اس سے انتہاپسندی بڑھے گی، ظلم پر ہر انسان ذلت کی زندگی پر موت کو ترجیح دیتاہے، اگر مجھے اس طرح بند کیا جاتا تو میں اس ظلم کے خلاف لڑتا، جب انسانوں کو دیوار سے لگا دیا جائے تو وہ انتہاپسندی کی طرف جاتے ہیں، آج سوا ارب مسلمان کشمیر کی طرف دیکھ رہے ہیں، کشمیر پر ہونے والے ظلم کا ردعمل آئے گا، مودی کو اینٹ کا جواب پتھر سے ملے گا، دنیا کو کہتا ہوں کہ ہندوستان کے ہٹلر کو روکے، یہ قوم آخری وقت تک تمہارا مقابلہ کرےگی۔

وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ مودی جتنا مرضی ظلم کر لے کامیاب نہیں ہو گا کیونکہ کشمیر کے عوام ان کے ساتھ نہیں ہیں۔ہندو انتہا پسند جماعت آر ایس ایس کی تاریخ بتاتے ہوئے وزیراعظم نے کہا کہ سب کو پتہ ہونا چاہیے کہ مودی آر ایس ایس کا ممبر ہے اور آر ایس ایس وہ جماعت ہے جس کے اندر مسلمانوں کے لیے نفرت بھری ہوئی ہے، اس جماعت کے بنانے کا مقصد صرف یہ ہے کہ ہندوستان صرف ہندوؤں کے لیے ہے، مسلمانوں، سکھوں، عیسائیوں اور دیگر لوگوں کے لیے نہیں ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں