پاکستان پیپلز پارٹی کے رہنماء‌بجلی چوری میں ملوث قرار

سکھر(ویب ڈیسک )پاکستان پیپلز پارٹی (پی پی پی) کے رکن سندھ کاونسل منیر منگی بجلی چور نکلے۔حکام کے مطابق سکھر الیکٹرک سپلائی کمپنی (سیپکو) ٹاسک فورس نے کارروائی منیر منگی کے بنگلے پر کی جہاں بجلی چوری چل رہی تھی۔سیپکو ٹاسک فورس کے سربراہ عقیل جونیجو نے اس ضمن میں بتایا کہ اس علاقے کے با اثر پی پی رہنما منیر منگی کئی عرصے سے چوری کی بجلی چلا رہے تھے۔انہوں نے بتایا کہ پی پی رہنما منیر منگی پر سات لاکھ جرمانہ عائد کیا گیا جو انہوں نے موقع پر ہی ادا کر دیا ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ کسی بھی بجلی چور کو معاف نہیں کریں گے-

چاہے کوئی کتنا بھی بااثر ہو، اور اس کے خاتمے تک آپریشن جاری رہے گا۔یاد رہے دو روز قبل سیپکو ٹاسک فورس نے ایک کارروائی کے دوران رکن سندھ اسمبلی فیاض بٹ کے بنگلے پر بجلی چوری پکڑی تھی۔انچارج ٹاسک فورس عقیل جونیجو نے بتایا کہ فیاض بٹ پر دس لاکھ جرمانہ عائد کیا گیا اور بجلی بھی منقطع کردی گئی ہے۔ان کا کہنا تھا کہ پیپلز پارٹی سے تعلق رکھنے والے ایم پی اے کئی عرصے سے چوری کی بجلی چلا رہے تھے۔

انہوں نے کہا کہ جب تک عائد کردہ جرمانہ ادا نہیں ہوگا بجلی بحال نہیں کریں گے، کسی بھی بجلی چور کو معاف نہیں کریں گے چاہیں کتنا ہی بھی بااثر ہو۔اس سے قبل پی پی پی کی رکن قومی اسمبلی شازیہ سومرو کا گھر کنڈا کنیکشن سے چلنے انکشاف ہوا تھا۔چوری کی بجلی سے گھر میں موجود ایئر کنڈیشنز اور دیگر برقی آلات سے قومی خزانے کو ماہانہ لاکھوں روپے کا ٹیکہ لگایا جارہا تھا۔سیپکو کے مطابق رکن قومی اسمبلی کے گھر کے چار غیرقانونی کنکشن کاٹ دیئے گئے تھے۔اس کے علاوہ پیپلزپارٹی کے رہنما اور خورشید شاہ کے قریبی ساتھی آفتاب سومرو کے گھر کا کنکشن بھی کاٹا گیا تھا۔‎

اپنا تبصرہ بھیجیں