آرمی چیف کو تاجروں و صنعتکاروں نے ملکی برآمد میں‌کمی کا بتا کر چونکا دیا

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے تاجروں و صنعتکاروں سے اجتماعی ملاقات میں بات چیت کرتے ہوئے ان کو چونکا دیا کہ چین سے 12 ارب ڈالر کی برآمدات پاکستان آکر محض 6 ارب رہ گئیں۔ ’’جیونیوز ‘‘ کی رپورٹ کے مطابق آرمی چیف سے ملاقات کے دوران چیئرمین ایف بی آر شبر زیدی اور وزیر مملکت حماد اظہر وہاں موجود تھے۔ملاقات میں شریک ایک اسٹاک بروکر نے کہا کہ 6 ارب ڈالر کی انڈر انوائسنگ کی گئی۔ چیئرمین ایف بی آر شبر زیدی نے کہا کہ سیلزٹیکس ریفنڈ تین سال تک محدود کر دیا گیا ہے-

تعمیراتی صنعت کو سہولتیں دیں گے۔معروف بزنس مین، صنعتکار و تاجر میاں محمد منشاء نے کہا کہ تعمیراتی کنسیشن دینے کی ضرورت ہے اس سے پوری معیشت کا پہیہ چل سکتا ہے، نیب کو بزنس سے جدا کیا جائے۔علی حبیب کا کہنا تھا کہ اسمگلنگ تباہ کن ہے اس کو روکنے کی ضرورت ہے، فوج کے اقدامات کی تعریف بھی کی کئی جگہ باڑ لگا دی گئی ہیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں