آزادی مارچ روکنے کی کوشش کی تو پھر کیا کرینگے؟جمعیت علماء اسلام نے دھمکی دیدی

کوئٹہ(مانیٹرنگ ڈسیک )جمعیت علماء اسلام کے مرکزی سیکرٹری جنرل وسینیٹر مولانا عبدالغفور حیدری نے کہا ہے کہ آزادی مارچ کی تمام تیاریاں مکمل ہوچکی ہیں آزادی مارچ سے کوئی مائی کالال ہمیں روک نہیں سکتا اسلام آبادمیں کشمیریوں سے اظہار یکجہتی اور سلیکٹڈ وزیراعظم کے خلاف27اکتوبرکو آزادی مارچ ہمارا جمہوری حق ہے اورہم یہ حق استعمال کر کے رہیں گے اگر ہمارے راستے بندکرنے کی کوشش کی گئی تو اس سے پورا ملک جام ہوگا ہمارا حکومت سے اختلاف ہے ریاستی اداروں سے نہیں اورنہ کوئی جھگڑا ہے۔

ان خیالات کااظہار انہوں نے نجی ٹی وی سے بات چیت کرتے ہوئے کیامولانا عبدالغفور حیدری نے کہا کہ 27اکتوبر کو اسلام آباد میں کشمیریوں سے اظہار یکجہتی کے ساتھ ساتھ ملک میں دھاندلی زدہ انتخابات کے نتیجے میں آنے والی حکومت سے خاتمے کیلئے آزادی مارچ کاانعقاد کیا جارہا ہے اس سلسلے میں آزادی ملین مارچ کے تمام تر تیاریاں اور انتظامات مکمل ہوچکے ہیں ہمیں امیدہے کہ صوبائی حکومتیں ملین مارچ میں شرکت کیلئے آنے والے کارکنوں کی راہ میں رکاوٹیں پیدا نہیں کرینگے اگر ایسا کیا گیا تو اس سے پورا ملک جام ہوگا –

جو ہم نہیں چاہتے انہوں نے کہا کہ جمعیت علماء اسلام کے کارکن اور آزادی ملین مارچ کے شرکاء ہر حال میں اسلام آباد پہنچیں گے ہم نے اس سے قبل ملک بھر میں کامیاب اور پر امن 14ملین مارچ کئے ہیں پتہ نہیں اس بار کیوں حکومت بوکھلاہٹ کاشکار ہوچکی ہے اور ملین مارچ میں رکاوٹیں پیدا کرنے کی ناکام کوششیں کررہی ہیں انہوں نے کہا کہ ہمارا ریاستی اداروں سے کوئی اختلاف یاجھگڑا نہیں ہے ریاستی اداروں کے اہلکار ہمارے کارکنوں کوملین مارچ میں شرکت کرنے پر دھمکارہے ہیں ہمارا حکومت سے اختلاف ہے اداروں سے نہیں اور نہ ہی کوئی جھگڑا ہے ملین مارچ میں دیگر سیاسی جماعتوں کے کارکن اور رہنماء بھی ہمارے ساتھ اسٹیج پر شرکت کرینگے انہوں نے کہا کہ موجودہ حکومت کے وزیر بے تدبیر ایسے ایسے بیانات دے رہے ہیں-

جو انتہائی اخلاقیات اور پارلیمانی زبان کے منافی ہیں مگر ہمیں ان کے اس طرح کے بیانات سے کوئی غرض نہیں کیونکہ جولوگ جیسے ہوتے ہیں اسی مزاج کی گفتگو کرتے ہیں انہوں نے کہا کہ اسلام آباد میں ملین مارچ کرنا ہمارا جمہوری حق ہے اور ہم اسے استعمال کرکے رہیں گے اور یہ حق استعمال کرنے سے ہمیں کوئی مائی کا لال روک نہیں سکتا انہوں نے کہا کہ ہمارا اسلام آباد کا آزادی مارچ بھی پرامن ہوگاخیبر پختونخوا کے سلیکٹڈ وزیراعلیٰ نے قافلے کے روکنے کی جوبات کی اس پر میں یہ کہتا ہوں کہ چھوٹا منہ اور بڑی بات وہ ہمارے کارکنوں کو روک نہیں سکتے اگر ایسا کیا گیاتو ان کی اپنی حکومت جام ہوکررہے گی انہوں نے کہا کہ ایک طرف تو حکومت کہتی ہے کہ ملک میں جمہوریت ہے جب جمہوریت ہے تو پھر کس بات کا خوف ہے ہمیں ہمارے آئینی حق سے کوئی نہیں روک سکتا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں