مولانافضل الرحمان کی شہرت آسٹریلیا تک پہنچ گئی

کینبرا(ویب ڈیسک ) جمعیت علمائے اسلام (ف) کے سربراہ مولانافضل الرحمان کے دھرنے کی شہرت آسٹریلیا تک بھی پہنچ گئی ۔ تفصیلات کے مطابق جمیعت علمائے اسلام (ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمان الیکشن 2018ءمیں مبینہ دھاندلی کو جواز بناتے ہوئے وزیر اعظم عمران خان سے استعفی لینے کے لیے اسلام آباد میں دھرنا دیئے بیٹھے ہیں جہاں پیپلز پارٹی اور مسلم لیگ(ن) کے ساتھ اپوزیشن کی زیادہ تر جماعتیں ان کے ساتھ موجود ہیں ۔

ایک جانب جہاں مولانا فضل الرحمان کے دھرنے کو ملکی میڈیا میں بھرپور کوریج مل رہی ہے وہیں اب ان کی شہرت سات سمندر پار آسٹریلیا بھی جاپہنچی ہے ۔ معروف صحافی سلیم صافی نے سوشل میڈیا ویب سائٹ ٹویٹر پر ایک تصویر شیئر کی جس میں پاکستان اور آسٹریلیا کے مابین دوسرے ٹی ٹونٹی کے دوران ایک خاتون مولانا فضل الرحمان کی تصویر اٹھائے کھڑی ہے،اس تصویر کے کیپشن میں انہوں نے لکھا کہ ”مولانا کی تصویر آسٹریلیا میں کرکٹ گراؤنڈ تک پہنچ گئی“۔

خیال رہے کہ آزادی مارچ کے شرکا جمیعت علمائے اسلام (ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمان کی کال پر اسلام آباد میں موجود ہیں، لیکن گذشتہ شب ہونے والی بارش نے مارچ کے شرکا کی مشکلات میں مزید اضافہ کر دیا ہے، کئی افراد پنڈال سے جا چکے ہیں جبکہ آزادی مارچ کے شرکا کے پاس گرم ملبوسات نہیں جس کے سبب نزلے زکام جیسی بیماریاں پھیلنے لگی ہیں۔
شرکاءنے حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ مزید کنٹینر لگائے جائیں تاکہ وہ آسانی سے سے ان میں رہائش اختیار کر سکیں۔

آزادی مارچ میں اب تک تین شرکا دل کا دورہ پڑنے کی وجہ سے جان کی بازی ہار چکے ہیں۔ ذرائع کے مطابق جے یو آئی (ف) کے امیر مولانا فضل الرحمان کا یہ دھرنا آئندہ 24 سے 48 گھنٹوں میں ختم ہونے کا امکان بھی ظاہر کیا جا رہا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں