مولانا فضل الرحمٰن نے 12 ربیع الاول تک کی ڈیڈ لائن دے دی

سلام آباد (ویب ڈیسک) مولانا فضل الرحمان نے حکومت کو 12 ربیع الاول تک کی مہلت دے دی، جمیعت علمائے اسلام (ف) کے سربراہ نے وزیر اعظم کے فوراً مستعفیٰ ہونے کا کہا یا پھر تین ماہ میں دوباہ انتخابات کرانے کا حکم دے دیا ہے۔حکومتی کمیٹی نے جے یو آئی ایف کے سربراہ کا پیغام وزیر اعظم تک پہنچا دیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق مولانا فضل الرحمان کی آج چوہدری پرویز الہی سے پانچویں بار ملاقات ہوئی ۔

اس ملاقات کے دوران جمیعت علمائے اسلام کے سربراہ مولانا فضل الرحمان نے حکومت حکومت 12 ربیع الاول تک کی مہلت دے دی ہے۔ اس کے ساتھ ساتھ وزیر اعظم عمران خان کے فوراً استعفے کا مطالبہ کیا ورنہ آنے والے تین ماہ میں دوباہ الیکشن کروانے کی تجویز دی گئی۔ اس کے بعد چوہدری پرویز الہیٰ نے وزیر اعظم عمران خان سے ملاقات کی اور تمام تر صوتحال سے آگاہ کر دیا۔ اس ملاقات میں چوہدری پرویز الہیٰ نے وزیر اعظم کو مولانا فضل الرحمان سے 5 ملاقاتوں کی تفصیلات بتائیں-

اس کے ساتھ مذاکرات کے تعطل کی وجوہات پر بھی بریفنگ دی۔ ذرائع نے بتایا کہ وزیراعظم عمران خان سے حکومتی مذاکراتی کمیٹی کی ملاقات شروع چکی ہے، جس میں حکومتی کمیٹی کی رہبر کمیٹی کی شرائط پر وزیراعظم سے مشاورت کی جائے گی۔ مذاکراتی کمیٹی کی رہبر کمیٹی سے ہونے والی ملاقاتوں پر وزیراعظم کو بریفنگ دے گی۔ وزیر اعظم عمران خان نے کہا کہ بار بار استعفےکی بات ہو رہی ہے، اگر استعفا ہی شرط ہے تو مذاکرات نہیں ہونے چاہییں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں