صدر آزادکشمیر کی طرف سے ڈاکٹر عبدالحمیدکو ویمن یونیورسٹی باغ کا نیاوائس چانسلر تعینات کرنے کی منظوری

راولاکوٹ(سٹیٹ ویوز)صدر آزاد کشمیر مسعود خان نے جامعہ خواتین آزاد کشمیر باغ میں وائس چانسلر کی تعیناتی کیلئے یونیورسٹی ایکٹ کے مطابق میریٹوریس پروفیسر ڈاکٹر عبد الحمید کے نام کی حتمی منظوری دیتے ہوئے باضابطہ نوٹیفکیشن کیلئے سمری وزیر اعظم سیکرٹریٹ کو ارسال کر دی ہے۔

حکومت آزاد کشمیر کی جانب سے چند روز میں نوٹیفکیشن جاری ہو نے کا امکان ہے۔تفصیلات کے مطابق صدر آزاد کشمیر مسعود خان نے جامعہ خواتین کے وائس چانسلر کی تعیناتی کیلئے سرچ کمیٹی کی جانب سے دیئے گئے پینل اور یونیورسٹی سینیٹ کی جانب سے منظور کردہ پینل میں سے انٹرویو کے بعد میرٹ کی بنیاد پر”یونیورسٹی ایکٹ“ کے مطابق

جامعہ خواتین کی وائس چانسلر شپ کیلئے میریٹوریس پروفیسر ڈاکٹر عبدالحمید کا انتخاب کیا۔واضع رہے کہ یونیورسٹی کی سینیٹ اور صدر ریاست نے جامعہ خواتین کے وائس چانسلر کے تقرر کیلئے جو سرچ کمیٹی تشکیل دی اس میں خواتین ممبران زیادہ تعداد میں تھیں جبکہ سرچ کمیٹی کی سربراہی بھی ایک خاتون وائس چانسلر کو سونپی گئی۔

ڈاکٹر عبدالحمید اس وقت جامعہ پونچھ میں سینئر ڈین جبکہ آزاد کشمیر کی جامعات میں سینئر ترین پروفیسر ہیں۔میریٹوریس پروفیسر ڈاکٹر عبدالحمید نے ”پی ایچ ڈی“پیپلز فرینڈ شپ یونیورسٹی ماسکو جبکہ پوسٹ ڈاکٹریٹ برطانیہ کی جامعات ”یونیورسٹی آف سسکس برائٹن اور ”یونیورسٹی آف ابریسٹ ود ویلز“سے کیا۔

میریٹوریس پروفیسر ڈاکٹر عبدالحمید پوسٹ ڈاکٹریٹ کیلئے کامن ویلتھ فیلو شپ حاصل کر کے کامن ویلتھ فیلو بنے۔انھوں نے جامعہ آزاد کشمیرسے بطور لیکچرر اپنے کیئرئر کا آغاز کیا اور اپنے پیشے سے لگن اور محنت کی بنیاد پر بہت جلد ترقی کی منازل طے کیں۔

ڈاکٹر عبدالحمید سال 2003-4ء میں جامعہ آزاد کشمیر میں ”اوپن میرٹ“پر بالترتیب ایسوسی ایٹ پروفیسر اور پروفیسر بنے۔ڈاکٹر عبدالحمید نے جامعہ آزاد کشمیر اور جامعہ پونچھ میں 15سال سے زائد عرصے تک اپنے فرائض احسن طریقے سے ادا کرنے کے بعد سال 2019ء میں میریٹوریس پروفیسر گریڈ 22کا اعزاز حاصل کیا۔

ڈاکٹر عبدالحمید جامعہ آزاد کشمیر اور جامعہ پونچھ میں اکیڈمک منیجمٹ اور ایڈمنسٹریشن میں کلیدی پوزیشنز پر فرائض سرانجام دیتے رہے اور جامعات کی ڈویلپمنٹ میں اہم کردار ادا کیا۔ڈاکٹرعبد الحمید نے جامعہ پونچھ میں فیکلٹی آف ایگریکلچر اورفیکلٹی آف بیسک اینڈ اپلائیڈ سائنسز کے ڈین کے طور پر خدمات سر انجام دیں۔

ڈاکٹر عبدالحمید شعبہ ہارٹیکلچر اور شعبہ ایسٹرن میڈیسن اینڈ سر جری کے چیئرمین بھی رہے۔یونیورسٹی آف دی پونچھ میں پہلے ڈائریکٹر فنانس تعینات ہو ئے۔جبکہ ڈائریکٹر پلاننگ اینڈ ڈویلپمنٹ کے طور پر بھی خدمات سر انجام دیں۔ڈاکٹر عبد الحمیدنے نئی جامعہ کی ترقی میں وائس چانسلر کے ہمراہ اہم کردار ادا کیا۔

ماہرین کے مطابق جبکہ جامعہ میں اپنے ڈائریکٹوریٹس کو بھی بہترین انداز میں منظم کیا اور جامعہ آزاد کشمیر میں بھی ڈائریکٹر اکیڈمکس،ایجوکیشن پلاننگ اور ریسرچ کے طور پر فرائض سر انجام دیتے رہے اور وائس چانسلر کے ہمراہ مختصر مدت میں یونیورسٹی کے دومیگا پراجیکٹس کی منظوری میں اہم کردار ادا کیا۔

یہی دو میگا پراجیکٹس دونوں جامعات کی ترقی میں بنیادی اہمیت کے حامل ہیں۔جامعہ پونچھ میں زمین کے حصول،میگا پراجیکٹس کی منظوری اور بہترین فناشل منیجمنٹ سے یونیورسٹی کی کامیابی کی بنیاد رکھی۔اعلیٰ تعلیمی اور تحقیقی معیار کی بہتری کے لئے آپ عالمی کانفرنسز،ورکشاپ اور سیمینارز کے انعقاد کے حوالے سے شہرت رکھتے ہیں –

جبکہ کئی عالمی اور قومی سطح کی کانفرنسز میں جامعہ پونچھ کی نمائندگی کر چکے ہیں۔جامعہ پونچھ میں کی جانیوالی تحقیق کو معاشرتی استعمال میں لانے اور جامعہ پونچھ اور کمیو نٹی کے درمیان مضبوط تعلق استوار کرنے کی بنیاد رکھی۔یہی وجہ ہے کہ آج جامعہ پونچھ کی تمام پیشہ ور سرگرمیوں میں کمیونٹی کی بھر پور نمائندگی نظر آ تی ہے۔

جامعات کے انتظامی اورتدریسی امور میں وسیع تجربے کی بنیاد پر انھیں جامعہ خواتین آزاد کشمیر باغ کے چیلنجز سے نمٹنے کیلئے بطور وائس چانسلر منتخب کیا گیا۔ڈاکٹر عبدالحمید کو بطور وائس چانسلر جامعہ خواتین کے شدید مالی خسارے،زمین کے حصول اور انفراسٹریکچر کی تعمیر اوراکیڈمک پروگراموں کی”نیشنل ایکریڈٹ باڈیز“سے منظوری جیسے چیلنجز کا سامنا ہو گا۔

ماہرین کے مطابق ایسی صورتحال میں عوام بھی ایک متحرک،زیرک اوراعلیٰ تعلیم یافتہ شخصیت کا تقرر چاہتے تھے۔توقع کی جا رہی ہے کہ وہ ان چیلنجز سے نبرد آزما ہو کر اور خطہ میں اعلیٰ تعلیم کے فروغ کیلئے توقعات پر پورا اتر کر سرخرو ہونگے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں