“ربجا”نے علاقائی اخبارات کیساتھ امتیازی سلوک کے خاتمے کامطالبہ کردیا

اسلام آباد( سٹیٹ ویوز)راولپنڈی اسلام آباد بیوروز جرنلسٹ ایسوسی ایشنRIBJA کے صدر سردار شوکت محمود نے وزیر اعظم پاکستان عمران خان سے مطالبہ کیا ہے کہ ملک بھر کے علاقائی اخبارات اور انکے ساتھ وابستہ ہزاروں صحافیوں اور میڈیا ورکرز کے ساتھ امتیازی اور پاکستان کے آئین کے مغائر سلوک کا خاتمہ کیا جائے۔ پریس انفارمیشن ڈیپارٹمنٹ (پی آئی ڈی) میں نئے تعینات ہونے والے پی آئی او مساوی بنیادوں پر میڈیا کی تقسیم کو یقینی بنائیں ۔نئے پی آئی او طاہر حسن سے امیدہےکہ وہ ماضی کی نا انصافیوں کا ازالہ کریں گے۔علاقائی اخبارات چونکہ ملک کے چاروں صوبوں سمیت آزادکشمیر اور گلگت بلتستان میں 70 فیصد سے زائد علاقوں میں پڑ ھےجاتےہیں جبکہ قومی اخبارات 30 فیصد علاقوں میں پڑھے جاتےہیں ۔علاقائی اخبارات کی ملک بھر میں ناگزیر اہمیت کے پیش نظر پی آئی ڈی میں مختص 25 فیصد کوٹہ بڑھا کر 50 فیصد کیا جاکر منصفانہ تقسیم کو یقینی بنایا جائے۔

نیشنل پریس کلب میں اپنی صدارت میں منعقد ہونے والے راولپنڈی اسلام آباد بیوروز جرنلسٹ ایسوسی ایشن ربجا کی جنرل باڈی کے سالانہ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے صدر تنظیم سردار شوکت محمود نے کہا کہ ملک بھر میں سال 2019 میں مختلف میڈیاہاوسز سے6 ہزار سے زائد اور جڑواں شہروں اسلام آباد اور راولپنڈی میں 7 سو سے زائد صحافیوں کو حکومتی اشتہارات نہ ملنے کا جواز بنا کر غیر قانونی طور پر نوکریوں سے بر طرف کردیا گیا۔اس لحاظ سے 2019 کو صحافیوں کے معاشی قتل کاسال قرار دینا بے جا نہ ہوگا۔جبکہ چھ ماہ سے نوائے وقت سمیت اخباری کارکنوں کی تنخواہیں نہیں دی گی۔وزیر اعظم عمران خان کو میڈیا کے موجودہ خوفناک بحران اور صحافیوں کی بڑے پیمانے پر بر طرفیوں پر مکمل لاتعلق رہنے کے بجائے اپنی آئینی قانونی اور اخلاقی ذمہ داری پوری کرتے ہوئے انکی بحالی کے لئے حکومتی اقدامات کرنے چاہئے ۔

سردار شوکت محمود نے پی ایف یوجے سمیت پاکستان بھر کی صحافتی تنظیموں سے اپیل کی ہےکہ وہ صحافیوں کی معاشی ناکہ بندی کے خلاف مشترکہ اور نتیجہ خیز جہدوجہد شروع کریں۔اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے اے پی پی ورکرز یونین کے صدر شہزاد چوھدری نے کہا کہ صحافیوں کے حقوق کے لیئے ربجا کے ساتھ ملکر کسی قربانی سے دریغ نہیں کرینگے۔ہماری کامیابی باہمی اتحاد میں مضمر ہے۔

ربجا کے جنرل سیکرٹری مرتضی ملک نے کہا کہ ہم اپنے ساتھیوں کے حقوق کے لیئے کسی قربانی سے دریغ نہیں کرینگے۔ربجا کی تاریخ جہدوجہد سے عبارت ہے سیکرٹری فنانس شوکت ستی نے کہا کہ ہماری اصل طاقت ہمارے ممبران انکے معاشی حقوق پر کسی کو شب خون مارنے کی اجازت نہیں دینگے ۔

اس موقع تنظیم کے نائب صدور سید ظاہر شاہ۔نثار تبسم ،فیاض چوہدری جوائنٹ سیکرٹیریز آصف ملک ارشد یوسفزئی،۔چوھدری وحید رسول،وقار چوھدری اور آرآئی یوجے کے سابق سیکرٹری طارق عثمانی نے کہا کہ ربجا صحافی برادری کی حقیقی طاقت ھے جس احتجاج میں ربجا شامل نہ ہو کامیاب نہیں ھوتا۔اس موقع پر صدائے چنار کے چیف ایڈیٹر چوھدری امجد ایڈیٹر اعجاز عباسی واس کے چیف ایڈیٹر اسد چوھدری ربجا کے سابق صدر جاوید اقبال ربجا کے سابق جنرل سیکرٹری اعظم خان ھوتی سابق سیکرٹری اعجاز کھوکھر ندیم،عید محمد نعمان صادق مختار پیرزادہ ملک حفیظ،سرمد صابری ایاز استوری عامر لطیف آصف محمود شاہ طیب محمود حافظ اظہر منصور ظفر چوھدری انوار محمد صدیق احسن نارنجو رضوان چوھان محمد عظمت زبیر شاہ خالد نور سنیئر صحافی محبوب تنولی ربجا کے سنیئر اراکین قربان چوھدری کفایت اللہ خان نوید ملک حاجی داود احمد عتیق خان منیب اسلام بخاری سردار فیاض انجم مقصود احمد عارف جنجوعہ بابر حسین حاجی وحید زمان عامر لاشاری اسد عباس وقار خان،اخلاق خان تسلیم احمد آسیہ عمیر ناصر خان نازیہ الطاف محسن مبشر الطاف حسین جواد احمد گولڑہ، مجاھد بھٹی سید خاور عباس شاہ زوالفقار خان،نورفراز خٹک عتیق الرحمن عبداللہ سواتی مصطفی سواتی شیخ امان باسط علی راجہ لطیف شبیر احمد راجہ ابرار راجہ فیصل خان اصغر محمود رازق محمود بھٹی مرزاءجاوید عاطف خان جاوید ملک ،اظہر حسین اقبال اعوان اور وڈیو جرنلسٹ ایسوسی ایشن کے صدر نوشاد عباسی سمیت ممبران نے بڑی تعداد میں شرکت کی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں