عمران حکومت کا یہ فیصلہ زبردست ہے اور اسکے حیران کن نتائج برآمد ہونگے ۔۔۔۔۔ امیر جماعت اسلامی سراج الحق بھی عمران حکومت کی تعریف پر مجبور ہو گئے

کوئٹہ( ویب ڈیسک)امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سراج الحق نے وزیراعظم کے دوسروں کی جنگ میں حصہ نہ لینے کے بیان کو خوش آئندقرار دیتے ہوئے مطالبہ کیا ہے کہ دوسروں کی

جنگ کو ملک میں لانے والوں کے ذمہ داروں کا تعین کرنے کے لیے فوری طور پر ایک کمیشن بنایا جائے ۔امریکی جنگ کاحصہ بننے سے ملک کو 120ارب ڈالر اور 75ہزار لوگوں کا جانی

نقصان اٹھا نا پڑا۔ ملکی معیشت اور تجارت کو ناقابل تلافی نقصان ہوا۔2023ء کے انتخابات میں مرضی کے نتائج حاصل کرنے کے لیے ابھی سے منصوبہ بندی شرو ع کردی گئی ہے ۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے جماعت اسلامی بلوچستان کے صوبائی سیکرٹریٹ الفلاح ہاؤس میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔

انہوں نے کہاکہ بلوچستان حکومت کے وزرا اور سرکاری آفیسرز میرٹ کا قتل عام کرکے معمولی نوکریوں کو بھی لاکھوں روپے میں بیچتے ہیں۔سکول کے چوکیدار کی نوکری بھاری رشوت کے بغیر نہیں ملتی جس سے نوجوانوں کے اندر مایوسی بڑھتی جاررہی ہے ۔

صوبے میں کرپشن بڑھ رہی ہے ۔ بلوچستان سے لاپتہ ہزاروں لوگوں کی بازیابی کے لیے کوئی موثر کوشش نہیں کی گئی جس کی وجہ سے ان خاندانوں میں غم و غصہ اور اشتعال بڑھ رہا ہے ۔بلوچستان میں حکومتی ر ٹ قائم کرنے کے نام پر قائم کی گئی ہزاروں چوکیوں میں انسانیت کی تذلیل ہورہی ہے ۔

اس نامناسب رویے کے خلاف عوام کے اندر پکنے والا لاوا کسی وقت بھی آتش فشاں پہاڑ کی طرح آگ اگلنے لگے گا جس پر قابو پانا مشکل ہوجائے گا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں