میگرین سے چھٹکاراکیسے پائیں؟جانیئے اس رپورٹ میں

تل ابیب( مانیٹرنگ ڈیسک) : اسرائیلی کمپنی نے بازو پر باندھی جانے والی ایسی پٹی بنائی ہے جو میگرین سے ہونے والے درد کو کم کرسکتی ہے۔

اس پٹی کو اوپری بازو پر بلڈ پریشر کے پٹے کی طرح پہنا جاتا جسے نیری ویو کا نام دیا گیا۔ میگرین پٹی میں 2 (الیکٹروڈ)، ایک چپ اور ایک بیٹری لگی ہے جو بازو کی جلد سے مس ہوتی رہتی ہے۔ کمپنی کے مطابق لیکٹروڈز ہلکی بجلی خارج کرتے رہتے ہیں جو بازو کی رگوں اور اعصاب سے ہوتی ہوئی دماغ کی جڑ تک جاتی ہے۔

اس طرح دماغ کے نیورو ٹرانسمیٹر سرگرم ہوجاتے ہیں جو درد کم کرنے والی قدرتی دوا کی طرح کام کرتے ہیں۔ سر کا خوفناک درد شروع ہوتے ہی اسے اسمارٹ فون سے آن کیا جاتا ہے اور ایپ کے ذریعے بجلی کے جھماکوں کی شدت اور تیزی کو کنٹرول کیا جاسکتا ہے۔

اس پٹی کو کئی مریضوں پر آزمایا گیا ہے، کل 71 ایسے مریضوں میں یہ پٹی لگائی گئی جنہیں ایک مہینے میں درد کے 8 دورے تک پڑتے تھے۔ تاہم ڈاکٹروں نے مریضوں کو پٹی کے بارے میں نہیں بتایا جب کہ کچھ افراد کو فرضی علاج دیا گیا جو بہت کمزور تھا۔ لیکن جب بجلی کی پٹی لگائی گئی تو 64 فیصد مریضوں نے کہا کہ ان کا درد 50 فیصد تک کم ہوگیا۔

ان تمام مریضوں کا کم سے کم 20 منٹ تک علاج کیا گیا تھا۔مریضوں اور ڈاکٹروں دونوں نے اس طریقہ علاج کو موئثر پایا ہے کیونکہ میگرین سے سردرد کی شدید کیفیت پیدا ہوتی ہے اور اب تک یہ مرض حتمی علاج کے دائرے میں نہیں آسکا ہے۔

کیٹاگری میں : صحت