کورونا وائرس:ماسک فروش کمائی میں اضافے کے باوجود وباء کے خاتمے کیلئے پرامید

اسلام آباد(فیصل علی) کورونا ہیلتھ ایمرجنسی کی وجہ سے جہاں اک جانب ملک بھر میں لاک ڈاؤن جاری ہے وہیں وفاقی دارلحکومت اسلام آباد میں بھی پندرہ روزہ جزوی لاک ڈاؤن جاری ہے ، اس لاک ڈاؤ ن میں کاروباری سرگرمیاں معطل ہیں  اور شاہراہوں پر ٹریفک انتہائی کم ہے ایسے میں  جب آپکا گزر شہر کی کچھ مرکزی شاہراہوں سے ہو گا تو سڑک کنارے آپکو ماسک اور دستانے فروخت کرنے والوں کے ٹھیلے نظر آئیں گے، کورونا کی وبا سے بچاو کے لیے احطیاطی تدابیر کے طور پر ماسک اور دستانوں کی مانگ میں بڑی حد تک اضافہ ہو گیا ہے ، جس کے بعد ان دیہاڑی دار ماسک فروشوں کے روزگار چمک اٹھے ہیں .

سٹیٹ ویوز سے بات چیت کرتے ہوئے اک ماسک فروش کا کہنا تھا کہ عام دنوں میں ان کی دیہاڑی اگ ر ایک ہزار روپئے لگ جاتی تھی تو اس وقت یہ بڑھ کر تین ہزار روپئے دیہاڑی تک یومیہ کما رہے ہیں جسکی بڑی وجہ دستانے اور ماسک کی مانگ میں اضافے کے بعد اس کی خرید میں اضافہ ہے۔

ماسک فروش کامزید کہنا تھا کہ عام دنوں کے ریٹس اور موجودہ ریٹس میں کافی فرق پڑا ہے عام دنوں میں  دستانے کا اک جوڑا ستر روپئے میں فروخت ہو رہا تھا لیکن اس وقت اک سو روپئے فی جوڑے کے حساب سے فروخت ہو رہے ہیں ، اسی طرح ماسک کی عام دنو ں میں قیمت تیس سے چالیس روپئے ہوتی تھی لیکن اس وقت پچاس روپئے میں فروخت ہو رہا ہے۔

ماسک فروش نے سٹیٹ ویوز کو مزید بتایا کہ انتظامیہ کی جانب سے مہنگے ماسک فوخت کرنے والوں کے خلاف کاروائی کےاحکامات جاری کئے گئے تھے اور وہ میرے سٹال پر دو تین مرتبہ آئے اور کہا کہ اگر آپ اس ریٹ سے زیادہ قیمت میں ماسک فروخت کریں گے تو آپکو تھانے لے جائیں گے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں