ریحام خان نے میاں‌بیوی کے حوالے سے قرآنی آیت کو ماننے سے انکار کر دیا

اسلام آباد( ویب ڈیسک) ریحام خان کا کہنا ہے کہ جو قرآن میں بتایا گیا ہے کہ میاں بیوی ایک دوسرے کا لباس ہوتے ہیں، میں اس بات کو نہیں مانتی اور نہ آپ کی بات سے اتفا ق کرتی ہوں، وقار ذکا کو جواب ۔ تفصیلات کے مطابق گزشتہ روز وزیر اعظم عمران خان کی اہلیہ نےمعروف اینکر وقار ذکا کے پروگرام میں شرکت کی، اس پروگرام میں ریحام خان نے انتہائی متنازعہ باتیں کہیں ۔

وقار ذکاء نے خاتون صحافی ریحام خان کو یوٹیوب پر اپنے پروگرام میں بلاکر سخت سوالات کیے جس کے جواب میں ریحام خان نے نماز کا بہانہ بنا کر کھسکنے میں ہی عافیت جانی۔قصہ کچھ یوں ہے کہ وقار ذکاء نے یوٹیوب پر اپنے پروگرام’معافی مانگو’ میں ریحام کو انٹرویو کیلئے دعوت دی اور سخت سوالات کیے، وقار ذکاء نے پروگرام کے شروع میں ہی وضاحت دیتے ہوئے کہا کہ یہ پروگرام بچے نہ دیکھیں۔

وقار ذکاء نے ریحام خان سے ان کی کتاب میں عمران خان کی نجی زندگی سے متعلق واقعات کے بارے میں سوالات پوچھے۔وقار ذکاء نے سخت لہجے میں قرآن اور احادیث کے حوالے دیتے ہوئے ریحام سے سوال کیا کہ دین اسلام کی تعلیمات ہیں کہ میاں بیوی ایک دوسرے کا لباس ہیں، ایک دوسرے کا راز دل میں رکھو، اگر آج تم کسی کا راز رکھو گے تو کل اللہ تمارے راز رکھے گا ، کیا جو کچھ آپ نے اپنی کتاب میں لکھا آپ کو اس پر کسی قسم کا افسوس ہے؟۔

ریحام خان نے ان کے سوالات کے جوابات میں کہا کہ میں آپ کے نقطہ نظر سے اتفاق نہیں کرتی اور سوال کا جواب دینے کی بجائے کہا کہ میری سوچ یہی ہے کہ دین کا لبادہ اوڑھ کر جو شخص خلوت میں ایسے کام کرتا ہو جو دین کے خلاف ہیں تو انہیں منظرعام پر لانا چاہیے۔وقار ذکاء نے اپنے انٹرویو میں ریحام خان سے کتاب میں عمران خان پر لگائے گئے الزامات پر سوال کیےاور دعویٰ کیا کہ کتاب میں ریحام خان نے جو کچھ لکھا وہ ریحام کے بجائے کسی اور کے الفاظ ہیں۔ ریحام خان کا مزید کیا کہنا تھا؟ ویڈیو آپ بھی دیکھیں:

اپنا تبصرہ بھیجیں