مڈٹرم الیکشن ، شہبازشریف حکومت کیخلاف میدان میں آگئے

اسلام آباد (سٹاف رپورٹر) آل پارٹیز کانفرنس کیلئے ن لیگ نے سفارشات کو حتمی شکل دے دی۔ نواز شریف کا آڈیو خطاب ایجنڈے کی ابتدائی منظوری کے بعد ہو گا۔

ذرائع کے مطابق ن لیگ اے پی سی میں مڈ ٹرم الیکشن کی تجویز دے گی، ن اور شین گروپ کا تاثر زائل کرنے کیلئے مریم نواز کو وفد میں شامل کیا گیا۔ ن لیگ حکومت ہٹاؤ مہم چلانے کے لیے نومبر میں عوامی جلسوں کی بھی تجویز دے گی

حکومت مخالف تحریک کیلئے مشترکہ فنڈز قائم کرنے کی بھی سفارش کی جائے گی۔ اسمبلیوں کے باہر ہفتہ وار مشترکہ احتجاج کا شیڈول دینے کی تجویز بھی دی جائیگی۔دوسری جانب آل پارٹیز کانفرنس میں شرکت کیلئے شہباز شریف کی قیادت میں ن لیگ کی 11رکنی ٹیم کا اعلان کر دیا گیا۔

مریم اورنگزیب کے مطابق شاہد خاقان عباسی، مریم نواز، احسن اقبال، ایاز صادق وفد میں شامل ہوں گے۔ خواجہ آصف، پرویز رشید، رانا ثنااللہ اور امیر مقام بھی اے پی سی کا حصہ ہوں گے۔

اپوزیشن جماعتوں کی آل پارٹیز کانفرنس کی میزبانی پاکستان پیپلز پارٹی کر رہی ہے، جس کا دو نکاتی ایجنڈا بھی جاری کر دیا گیا۔ کانفرنس میں حکومت کی دو سال کی کارکردگی کا جائزہ لیا جائے گا اور مستقبل کی حکمت عملی پر بھی مشاورت ہوگی۔ اپوزیشن جماعتوں کی جانب سے حکومت کو ٹف ٹائم دینے کے لئے تجاویز بھی دی جائیں گی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں