جمہوریت کی جنگ اور مریم کے مہنگے سینڈل سوشل میڈیا پر زیر بحث

اسلام آباد (سید فیصل علی )پاکستان مسلم لیگ ن کی رہنما مریم نواز کے مہنگے جوتے ایک بار پھر زیر بحث ہین اپوزیشن کی آل پارٹیز کانفرنس میں مریم نواز نے جہاں سبز لباس زیب تن کر رکھا ہے وہیں ان کا جوتا بھی سبز ہے جو کسی بین الاقوامی کمپنی کا ہے اور اس کی ومیت بھی اچھی خاصی بتائی جا رہی ہے، سوشل میٰڈیا صارفین کی جانب سے مریم نواز پر شدیدتنقید کرتے ہوئے کہنا ہے کہ جمہوریت اور غریب عوام کی بات کرنے والی مریم نواز لاکھوں روپئے مالیت کے جوتے پہن کر کس طرح عوام کی بات کر سکتی ہیں؟

ایک سوشل میڈیا صارف نے مریم نواز کے ان جوتوں کے بارے مین ایک ویڈیو بھی بنائی ہے جس میں دکھایا گیا ہ کہ یہ جوتے جس برینڈ سے خریدے گئے ہین وہاں امریکی ڈالرز میں اس کی قیمت کیا ہے اور پاکستانی روہپئے کے مطابق یہ قیمت کتنی ہے، جہاں دیکھا جا سکتا ہے کہ اس جوتے کی قیمت ایک ہزار تین سو پیینسٹھ ڈالرز ہے وہیں سوشل میڈیا صارف نے ان ڈالرز کو پاکستانی روپئے میں تبدیل کرتے ہوئے دکھایا ہے کہ مریم نواز کے یہ جوتے جو دو لاکھ پچیس ہزار سات سو چہتر روپئے مالیت کے ہیں۔

واضح رہے اس سے پہلے بھی اگست ۰۲۰۲ میں پاکستان مسلم لیگ ن کی رہنما مریم نواز نے اپنی ایک تصوریر انسٹاگرام پر پوسٹ کی تھی جس میں ان کے جوتوں پر سخت تنقید ہوئی تھی، اس وقت بھی ایک سوشل میڈی اصارف نے اس کمپنی سے جوتے کی قیمت کے اعداد و شمار کا اسکرین شارٹ لے کر ٹوئٹر پر شئیر کیا تھا، اور تنقید کرتے ہوئے لکھا تھا کہ، یہ ہماری ایلیٹ کلاس کی کہانی ہے جو بھوک اور پیاس کے مارے عوام کے حق کے لیے ٓواز بلند کرتی ہے، مریم نواز نے اس تصویر میں دنیا کے مہنگے ترین برانڈ کے سینڈلز پہن رکھے ہین جن کی قیمت چے سو اکیس امریکی ڈالر بنتی ہے، جو اس وقت پاکستانی ایک لاکھ روہئے بنتے ہیں۔

واضح رہے اپوزیشن کیاا ٓل پارٹیز کانفرنس میں شریک پاکستان مسلم لیگ ن کی رہنا مریم نواز کی گھڑی بھی اس بار تنقید کی زد میں ہے، بتایا جا رہا ہے کہ اس گھڑی کی قیمت 36450 یور ہے جو کہ پاکستانی تقریبا 72 لاکھ روپئے کی بنتی ہے، یہ بھی کہا جا رہا کہ یہ گھڑی مریم نواز کو اوظہبی کے شیخ کی جانب سے تحفے میں ملی تھی، جس کی قیمت دس لاکھ سے کئی زیادہ ہے۔ واضح رہے وزیر اعظم نواز شریف کو نیب میں توشہ خانہ ریفرینس میں مقدمہ کاسامنا رہا ہے،جس کے مطابق بیرونی ممالک کے سربراہان کی جانب سے ملنے والے تحائف سرکاری خزانہ میں جمع کروانے ہوتے ہیں جسے توشہ خٰانہ کہا جاتا ہے۔

وزیر اعظم نواز شریف کے 1997سے مختلف ادوار میں اقتدار میں رہتے ہوئے کئیں تحائف ملے تھے،لیکن انہوں نے سرکاری خزانے میں جمع نہیں کروائے۔انہی میں ایک، ابوظہبی حکمراں نے نواز شریف، کلثوم نواز، مریم نواز کو تین قیمتی گھڑیاں تحفے میں دیں، نواز شریف، کلثوم نواز کی گھڑیاں تو توشہ خانہ میں جمع کروا دی گئیں مگر مریم نواز کو تحفے میں ملنے والی گھڑی توشہ خانہ میں جمع نہیں کروائی اور اب بھی مختلف مواقعوں پر مریم نواز نے یہ گھڑی پہن رکھی ہتوتی ہے، جس پر سوشل میڈیا صارفین نے جہاں ان کے جوتوں کی اصل قیمت سامنے لا کر انہیں تنقید کا نشانہ بنایا ہے وہیں ان کی مہنگی گھڑی بھی ہمیشہ سے ہی تنقید کا نشانہ رہی ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں