ایمنسٹی انٹرنیشنل کشمیری بکروال گھرانوں کوبے گھر ہونے سے بچائے ،وکیل محمد علی اصغر کی اپیل

نوٹنگھم (رپورٹ شیراز خان )یوکے محمد علی اصغر انسانی حقوق کے وکیل نے ایمنسٹی انٹرنیشنل اور دیگر انسانی حقوق کی تنظیموں اور اقوام متحدہ سے اپیل کی ہے کہ وہ کشمیری خانہ بدوش افراد بکروال کو ان کے گھروں سے بے دخل ہونے سے بچانے کیلئے ایک مہم چلائیں۔

ہندوستانی حکومت نے خانہ بدوش بکروالوں کو ان کے گھروں سے بے دخل ہونے کا نوٹس جاری کیا ہے۔ یہ لوگ صدیوں سے کشمیر کے جنگلات میں اپنی ہی سرزمین میں مقیم ہیں۔ یہ خانہ بدوش اور دیگر کشمیری لوگ کشمیری شہری ہیں۔ بھارت آباد کاروں کی استعمار کی پالیسیوں پر عمل پیرا ہے اور جموں و کشمیر کی آبادیاتی تبدیلی کی خواہاں ہے۔

کشمیر پر قبضہ کرنے کے بعد اب ہندوستانی حکومت کشمیری عوام سے کشمیر کی زمین پر قبضہ کر رہی ہے اور کشمیری عوام کو ان کے روزگار اور گھروں سے محروم کررہی ہے۔ ہندوستانی حکومت کو ریاستی دہشت گردی سے روکنا ہوگا اور کشمیری عوام کو دہشت زدہ کرنا اور کشمیری عوام پر مظالم اور ظلم و ستم ڈالنا

اپنا تبصرہ بھیجیں