پکار/ شیراز خان ( لندن )

حضورۖ سے محبت اور نبیؐ پاک فری ہسپتال

ملعون رشدی نے 1989 میں ہزرہ سرائی کی بدنام زمانہ کتاب لکھی تو دنیا بھر کے مسلمانوں کے جزبات مجروح ہوئے برطانیہ میں محنت مزدوری کرنے والے سادہ لوح مسلمان بہت مشتعل ہوئے اللہ تعالیٰ کا فیصلہ ہے ہر بد سے خیر برآمد ہوتی ہے لندن کے نواحی شہر ہائی ویکمب میں مقیم حاجی گلستان خان نے اللہ و اکبر کے نعروں کو مساجد سے نکال کر سڑکوں پر لایا انہوں نے میلاد النبی کے جلوس گلیوں اور بازاروں میں لانے کی ٹھانی اور اس طرح مشتعل مسلمانوں نے اپنے آقا ومولا سے محبت کا اظہار کیا وہ 26 سال تک میلاد النبی صلی اللہ علیہ وسلم کے جلوسوں کی نمائندگی اور اپنے بزنس سے اس کا انتظام و وانصرام کرتے رہے ہیں آج برطانیہ کے ہر شہر میں میلاد النبیؐ کے جلوس نکلتے ہیں درود شریف کا ورد ہوتا ہے حاجی گلستان نے نبی اکرم اللہ علیہ وسلم سے محبت کے تقاضے پورے کرنے کے لئے آپ صلم کے نام نامی پر نبی پاک فری ہسپتال کرنے کی ٹھان لی دوسرے انسانوں کی بھلائی اور خدمت کے لئے بہت سارے لوگ آجکل میدان میں کام کر رہے ہیں ان میں بعض تو صیحع طور اللہ تعالیٰ کو حاضر وناظر جان کر کام کرتے ہیں لیکن اکثریت نعرے اور دعوئے تو بہت ہی کرتی ہے غریبوں یتیموں، مسکینوں اور غریبوں کے نام پر مال تو اکٹھا کیا جاتا ہے لیکن سوال یہ پیدا ہوتا ہے کہ دوسروں سے غریبوں کے نام پر مانگ کر اکٹھا کیا جانے والا پیسہ کیا اسی طرح ان ناداراور غرباء کو پہنچتا ہے؟

لیکن آجکل کے دور میں انسانیت زندہ کیسے ہے اس حوالے سے اگر زکر کیا جائے تو حاجی گلستان خان کا جو اپنی عمر کی 82 بہاریں دیکھ چکے ہیں اور لندن کے نواحی شہر ہائی ویکمب میں بیٹھ کر اپنے آبائی علاقے سوہاوہ ترقی موڑ ضلع جہلم میں قائم نبی پاک صلى الله علیہ وسلم فری ہسپتال چلاتے ہیں نبی پاک فری ہسپتال کے مقدس نام نامی پر ہسپتال قائم کرکے ایک ایسی حضوؐر سے عشق کی لازوال سچی اور لازوال والہانہ داستان رقم کی ہے جو رہتی دنیا تک باقی رہے گئی حاجی گلستان خان نے یہ ہسپتال 75 بستروں پر مشتمل 2004 میں قائم کیا تھا اس ہسپتال میں کل وقتی تین ڈاکٹرز ہیں جبکہ نرسیں ڈسپنسر ایک فارمیسی سپیشلسٹ کے علاوہ دوائیوں کی ڈسپنسری موجود ہے

جدید الٹراساونڈ مشین, دل کی بیماری کے لئے ای سی جی کی مشینیں دوائیاں اور انجکشن وغیرہ مفت میں مہیا کئے جاتے ہیں جبکہ دو ایمبولینس اور ایک بس بھی ہسپتال میں موجود ہے ایمرجنسی سروسز کے لئے ایمبولینس جب کہ ہر روز نبیۖ پاک فری ہسپتال کی بس سوہاوہ اور گردونواح کے مختلف علاقوں سے مریضوں کو ہسپتال لاتی اور واپس لے جاتی ہے نبی پاک فری ہسپتال کے سٹاف کے لئے یہاں ایک ہاسٹل قائم ہے سٹاف کو تنخواہ اور مفت میں کھانا مہیا کیا جاتا ہے یہاں آنے والے مریضوں سے کوئی دوائی یا میڈیکل چیک اپ کی کوئی فیس نہیں لی جاتی ہے ماسوائے 20 روپے رجسٹریشن فیس چارچ کی جاتی ہے

اس ہسپتال کی عمارت حاجی محمد گلستان خان نے خود اپنے خرچے سے بنوائی ہے اس ہسپتال کا سالانہ خرچہ تقریباً کم و بیش ڈیڑھ کروڑ تک ہے جو حاجی گلستان خان اپنی تین مختلف کمپنیوں اور اپنے بیٹے، بیٹیوں اور برطانیہ میں رہنے والے رشتہ داروں اور عزیز و واقارب کی مدد سے پورا کرتے ہیں جن میں چند نام مجھے لکھنے کی اجازت ہے جن میں لندن سے ممتاز بزنس مین راجہ عادل کیانی او بی ای، مانچسٹر سے راجہ محمد عباس، قاری الطاف اور انکی بیٹی نادیہ، بھانجے غضنفر علی، برمنگھم سے قمر زمان کے بیٹے اور راجہ شبریز اور دیگر شامل ہیں یاد رہے کہ نبی پاک فری ہسپتال میں حتی الامکان کوشش کی جاتی ہے کہ علاقہ عوام کو طبعی سہولیات دی جائیں مگر زیادہ سیریز مریض ہو تو اس کو راولپنڈی اسلام آباد کے ہسپتالوں میں بھیجا جاتا ہے میری بزرگوار حاجی گلستان خان سے یاد اللہ کوئی پچھلے کئی سالوں سے ہے

سال میں ایک دفعہ ہم ٹی وی چینل پر بیٹھ کر رمضان المبارک میں چند گھنٹے وقت لے کر بیٹھ جاتے تھے ہمارا مقصد یہ تھا کہ ایک تو جہلم سوہاوہ کے علاقہ عوام کو بتایا جائے کہ وہ نبیؐ پاک فری ہسپتال میں ملنے والی سہولیات کو استعمال کریں دوسرا جو بھی عزیز و اقارب اس ہسپتال کے ساتھ تعاون کرتے ہیں اور اس کار خیر میں حصہ لیتے ہیں ان کا شکریہ ادا کیا جائے لیکن چونکہ حاجی گلستان خان کی عمر اور ان کی صحت اب سفر کی اجازت نہیں دیتی ہے کہ وہ ٹی وی چینل پر جاسکیں اور یہ بات بھی قابل تحسین ہے کہ حاجی صاحب رمضان المبارک کا روضہ نہیں چھوڑتے ہیں

اگرچہ اس ہسپتال کے اخراجات اور انتظام و وانصرام حاجی صاحب خود ہی کرتے ہیں انہوں نے اس مقصد کے لئے ایک نبی پاک فری ہسپتال کے لئے ایک چیریٹی بھی رجسٹرڈ کروائی ہوئی ہے جس کے لئے وہ اپنا دفتر اور چیریٹی کے دیگر اخراجات خود برداشت کرتے ہیں یاد رہے کہ چیریٹی پر اٹھنے والے تمام اخراجات خود برداشت کرتے ہیں احتیاطاً میں چیریٹی رجسٹرڈ کا نمبر بھی لکھ دیتا ہوں جس کسی نے چھان بین کرنی ہو تو کر لے حاجی گلستان خان اور بیگم گلستان صاحبہ کا کہنا تھا کہ اس ہسپتال کا نام ہی ایسا ہے کہ انہیں پورا یقین ہے کہ انکی زندگی کے بعد بھی یہ ہسپتال قیامت تک چلتا رہے گا نبی اکرم صلی اللہ علیہ وسلم سے مُحبت کے تقاضے یہی ہیں کہ نبی اکرم صلی علیہ وسلم کے نام گرامی پر پر عمل بھی ویسا ہی ہو جس طرح حاجی گلستان خان نے عمل کرکے کیا ہے نبی پاک فری ہسپتال کی چیریٹی نمبر یوکے میں1087546
رجسٹرڈ ہے اور رابطے کے لئے حاجی گلستان خان کے دونوں بیٹوں قیصر علی خان اور محمد وسیم خان شامل ہیں

اپنا تبصرہ بھیجیں