سنیئر صحافی حماد الحسنین بخاری پر تشدد قابل مذمت ،انتظامیہ ملزمان کو فوری گرفتار کرے، سید مختار بخاری

حویلی(سٹاف رپورٹر)سماجی وسیاسی رہنما سید مختار بخاری نے سٹیٹ ویوز سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ حویلی میں قانون نام کی کوئی چیز نہیں ۔ حویلی کے نوجوان اور سنیئر صحافی سید حماد بخاری کیلئے مقتول مظلوم خواتین کے حق میں آواز بلند کرنا وبال جان بن گئی ۔

حویلی میں ن لیگی حکومت کی سرپرستی میں جو قتل عام ہواوہ قابل مذمت ہے ۔ سیدحمادالحسنین بخاری آپ پرکئےجانیوالے تشدد کی بھرپور مذمت کرتا ہوں،ملزمان کےخلاف ایف آر تاحال درج نہ ہونا وزیرحکومت کے ملوث ہونے کی نشاندہی کرتی ہے۔

موجودہ وزیرحکومت کی موجودگی میں ملزمان کو کھلی چھٹی ملنا تشویشناک امر ہے۔ ملزمان کا ابھی تک گرفتارنہ کیا جانا اس بات کی غمازی ہے کہ وزیر موصوف کی ایماء پر ملزمان کو گرفتار نہیں کیا جارہا اور اس سارے تشدد اور قتل عام میں موجودہ حکومت کا ملوث پایا جانا ریاست میں غنڈہ گردی کے مترادف ہے ۔

تمام طبقہ فکر کو سینیئر صحافی سید حمادالحسنین بخاری کے حق میں آواز بلند کرنی چاہئے تاکہ مستقبل میں ایسے واقعات کو روکا جاسکے۔ بعض لوگ ملزمان کو کھلی چھوٹ دیکر مزید قتل وغارت کی راہ ہموار کررہے ہیں جسے ناکام بنائیں گے ۔

حویلی کی انتظامیہ سے مطالبہ ہے کہ سید حماد الحسنین پر تشدد کرنیوالوں کو فوری قانون کے کٹہرے میں کھڑا کرکے انصاف فراہم کرے ورنہ ریاست ، ریاستی قوانین اور انتظامی کارکردگی پر تحفظات برقرار ہیں جو مزیدتقویت کا باعث بنیں گے ۔۔

اپنا تبصرہ بھیجیں