لوڈشیڈنگ کا دورانیہ 10 گھنٹے تک پہنچ گیا،عوام کا جینا محال

لاہور (سٹاف رپورٹر) ملک بھر میں غیراعلانیہ لوڈشیڈنگ نے عوام کا جینا محال کر دیا۔ شہروں میں 5 سے 8 جبکہ دیہات میں 8 سے 10 گھنٹے بجلی کی بندش معمول بن گئی۔ بعض علاقوں میں دورانیہ بارہ گھنٹے سے بھی بڑھ گیا۔

لاہور، کراچی، اسلام آباد، کوئٹہ، راولپنڈی، ملتان سمیت ملک کے بیشتر شہروں میں بجلی کی غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ کا سلسلہ جاری ہے۔ کراچی کے علاقے ڈی ایچ اے فیز سیون، لیاری سنگولین، چاکیواڑہ، رنچھوڑلائن میں بجلی بندش کا سلسلہ جاری ہے۔ مستثنیٰ علاقوں میں ایک سے تین گھنٹوں کی لوڈشیڈنگ کی جا رہی ہے۔ گلشن معمار، ایف بی ایریا بلاک ٹو، نارتھ ناظم آباد بلاک کے صبح سے بجلی بند ہے۔ شکایت کرنے پر بجلی بندش مقامی فالٹ کا نتیجہ بتائی جا رہی ہے۔

صارفین کا کہنا ہے بار بار شکایات کے باوجود بجلی بحال نہیں کی جا رہی، ساری رات بغیر بجلی کے جاگتے ہوئے گزری ہے جبکہ عزیزآباد بلاک آٹھ، نیو کراچی، سرجانی ٹاون میں بھی شہریوں کو بجلی بندش کا سامنا ہے۔ گورنر سندھ، وزیر توانائی اور اب نیپرا نے بھی نوٹس لیا لیکن کے الیکٹرک کی جانب سے کراچی میں غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ سے شہریوں کو اب تک ریلیف نہ مل سکا۔

کوئٹہ میں گرمی کی شدت میں اضافے کے ساتھ ہی شہر میں غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ بھی بڑھ گئی۔ صوبائی دارالحکومت کوئٹہ میں درجہ حرارت 39 ڈگری سینٹی گریڈ تک پہنچ چکا ہے۔ شہر کے وسطی علاقوں میں 6 سے 8 گھنٹے جبکہ نواحی علاقوں میں 10 سے 12 گھنٹے کی لوڈ شیڈنگ کی جا رہی ہے۔

شدید گرمی کے موسم میں بجلی کی غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ سے عوام بل بلا اٹھے، شہریوں نے غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ کے خاتمے کا مطالبہ کیا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں