ڈہرکی ، خیبر میل حادثات ، 9 افسر معطل،نام بھی سامنے آگئے

لاہور( مانیٹرنگ ڈیسک )ریلوے حکام نے ڈہرکی ٹرین حادثہ پر 6 اور خیبر میل کی بوگیاں پٹڑی سے اترنے کے واقعہ پر 3 افسروں کو معطل کردیا۔ چیف ایگزیکٹو ریلوے نثار احمد میمن کی ٹیکنیکل ایڈوائز پر ڈہرکی حادثے میں غفلت برتنے پر گریڈ 18 اور گریڈ 17 کے دو دو ،گریڈ 16 اور گریڈ گیارہ کے ایک ایک آفیسر کو معطل کیا گیا جبکہ حیدر آباد کے قریب خیبر میل کی ڈی ریلمنٹ پر گریڈ 19، 18 اور 16 کے ایک ایک آفیسر کو معطل کردیا گیا۔

وزیر ریلوے نے ابتدائی رپورٹ آنے کے بعد چھ افسران وملازمین کو معطل کرنے کا حکم دیا تھا۔ ڈویژنل مکینیکل انجینئر ٹو محمد عمران ،ڈی ای این ٹو سکھر غلام قادر، پی ڈبلیو آئی شمس الدین ، اسسٹنٹ مکینیکل انجینئر عبدالعزیز، اسسٹنٹ ٹرانسپورٹیشن آفیسر محمد نہال خان ،سب انجینئر ابتسام الحسن کو معطل کیا گیا۔

خیبر میل ڈی ریلمنٹ پر گریڈ 19 کے ڈپٹی ڈی ایس سول کراچی شوکت علی شیخ، گریڈ 18 کے ڈی ای این ٹو کراچی مجیب الرحمن اور پی ڈبلیو آئی حیدر آباد مسعود انوار کو معطل کیا گیا۔ادھر گھوٹکی کے قریب ٹرین حادثہ کے بعد دونوں ریلوے ٹریک بحال کردیئے گئے ، تمام ٹرینوں کو جائے حادثہ کی جگہ سے 10 کلو میٹر کی سپیڈ سے گزارا جارہا ہے ،ملبہ اٹھانے کا کام جاری ہے ۔

دوسری جانب ڈہرکی حادثے کے بعد ٹرین شیڈول بری طرح متاثر ہے ۔ کراچی اور کوئٹہ سے لاہور آنے والی ٹرینیں گھنٹوں تاخیر کا شکار رہیں ۔ کراچی سے آنے والی عوام ایکسپریس 27 گھنٹے ،تیز گام ایکسپریس 22 گھنٹے علامہ اقبال ایکسپریس 20 گھنٹے ،ملت ایکسپریس 20 گھنٹے ، فرید ایکسپریس 16 گھنٹے ،شاہ حسین ایکسپریس 22 گھنٹے تاخیر کا شکار ہوئیں ۔ ریلوے انتظامیہ نے لاہور سے جانے اور آنے والی چھ ٹرینیں منسوخ کردیں ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں