امریکی سیکرٹری بلنکن کی پاکستان کو دھمکی، امریکی دبائو مسترد اپنے موقف پر ڈٹے رہیں، روسی صدر پیوٹن کا عمران خان کو فون

بروسلز (مانیٹرنگ ڈیسک) افغانستان میں سیاسی عمل کی بحالی اور امریکی انخلاء میں پاکستان نے اہم سفارتی کردار ادا کیا ہے.

افغانستان میں طالبان کے اقتدار میں آنے اور سیاسی عمل کے بحال ہونے کے بعد پاکستان کو فوری طور پر طالبان حکومت کو قبول کرنا چاہئے تھا تاہم پاکستان کی جانب سے اس میں تاخیر ہوئی جس کا فائدہ اٹھاتے ہوئے امریکہ نے پاکستان کو پابند کردیا کہ اب وہ اس وقت تک طالبان حکومت کو تسلیم نہیں کریگا جب تک انسانی حقوق اور دیگر معاملات کے حوالے سے ان اقدامات کو پورا نہیں کیا جاتا

جنھیں امریکہ بہتر سمجھتا ہے ان خیالات کا اظہار عالمی مصالحتکار فیصل محمد نے کیا انھوں نے کہا کہ سیکرٹری بلنکن کی اس وارنگ کے بعد روسی صدر ولادمیر پیوٹن کا پاکستانی وزیر آعظم کو فون انتہائی اہمیت کا حامل ہے

اس فون کال سے پاکستان پر پڑنے والے براہ راست دباو کو کم کرنے میں بڑی مدد ہوگی کیونکہ امریکی احکامات کے فوری بعد روسی صدر کا از خود رابطہ درحقیقت پاکستان کو اپنے موقف میں ڈٹے رہنے کا پیغام ہے ۔۔۔۔۔۔

اپنا تبصرہ بھیجیں