بلوچستان: طوفانی بارشوں نے تباہی مچا دی، ایمرجنسی نافذ، ملازمین کی چھٹیاں منسوخ

کوئٹہ (مانیٹرنگ ڈیسک) بلوچستان میں طوفانی بارشوں نے تباہی مچا دی، کئی اضلاع میں ایمرجنسی نافذ کر دی گئی ہے۔

تفصیلات کے مطابق بلوچستان میں طوفانی بارشوں کے باعث کئی رابطہ سڑکیں پانی بہا لے گیا جبکہ اسکول غیر معینہ مدت کیلئے بند کر دئیے گئےہیں جبکہ بلوچستان حکومت نے صوبے میں تمام سرکاری ملازمین کی چھٹیاں منسوخ کردیں ہیں۔

متاثرہ علاقوں میں امدادی کارروائیاں کی جارہی ہیں، بے گھر افراد میں راشن اور ضرورت کی اشیاء تقسیم کی جارہی ہیں۔ بالائی علاقوں میں شدید برفباری نے لوگوں کی مشکلات میں اضافہ کر دیا۔

دوسری جانب حکومت بلوچستان نے بارشوں کے بعد پیدا ہونے والی صورت حال کے پیش نظر گزشتہ روز گوادر کو آفت زدہ قراردیا تھا۔وزیراعلیٰ بلوچستان عبدالقدوس بزنجو نےگوادر کو آفت زدہ قرار دینےکا اعلان کرتے ہوئےکہا کہ اس کا جلد نوٹی فیکشن جاری کیا جائےگا۔انہوں نے مزید کہا کہ نیشنل ڈیزاسٹر منیجمنٹ اتھارٹی (این ڈی ایم اے) سے ابھی مدد نہیں مانگی، ضرورت پڑی تو بات کریں گے۔

خیال رہےکہ موسلا دھار بارشوں کے بعدصوبے کے کئی اضلاع میں نکاسی آب کا نظام درہم برہم ہونے سے بارش اورسیوریج کاپانی گھروں میں داخل ہوگیا ہے اور سڑکوں پر جگہ جگہ پانی کھڑا ہے جس سے کئی سڑکیں پانی بہا لے گیا ہے ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں