فوج کے خلاف زبان درازی بند کرتے ہوئے سیاسی جماعتیں جموں کشمیر آزادی کی تحریک پر آواز اٹھائیں۔سردار طاہر تبسم

اسلام آباد (سٹیٹ ویوز)تھنک ٹینک انسٹی ٹیوٹ آف پیس اینڈ ڈڈیویلپمنٹ (انسپاڈ)کے صدر ڈاکٹر سردار محمد طاہر تبسم نے سیاسی و دینی قیادت اور انکی پارٹیوں سے دردمندانہ اپیل کی ہے کہ وہ فوج اور اسکے اداروں کو سیاست میں نہ لائیں فوج واحد مضبوط قومی ادارہ ہےجس سے ملک کی شناخت اور نظریاتی و جغرافیائی سرحدوں کی محافظت کی ضمانت ہے اگر یہ ادارہ مشکوک ہو گیا تو کچھ نہیں بچے گا۔

ایک بیان میں انہوں نے کہا ہے کہ سیاست کی آلودگی نے ملک اور قوم دونوں کی عزت کو داو ُ پر لگایا ہوا ہے۔

سیاستدان ملک کے پچیدہ ترین مسائل، مہنگائی، سیاست میں دشمنی اور عدم برداشت کے ماحول کو ملکر حل کرنے کے بجائے فوج کے بارے میں بدزبانی کر رہے ہیں یہ کوئی اچھی کاوش نہیں بلکہ جمہوریت کی بساط کو لپیٹنے کی حماقت ہے جو قابل مذمت ہے۔

سردار محمد طاہر تبسم نے کہا ہے کہ سیاست میں رواداری، شرافت اور برداشت کے اصولوں کو اپنانے کی ضرورت ہے اور آئین و قانون کی بالادستی کو قائم کیا جائے، محض دشمنی، ضد اور عناد جمہوریت اور ملک دونوں کے لئے زہر قاتل ہیں۔

ملک کے حالات کو مزید خراب کرنے کی بجائے ان کو سدھارنے کی طرف توجہ دینے کی ضرورت ہے اور تمام سیاسی جماعتیں مل کر قومی مسائل حل کرنے کی طرف توجہ دیں اس ملک کو دلدل میں پھنسانے کی بجائے اسے سنبھالا دیں ملک کے ساتھ ہی ہم سب کی عزت و وقار ہے۔

انہوں نے کہا ہے کہ ملک دشمن طاقتیں پوری قوت سے سرگرم عمل ہیں ان کو شہ دینے والے محب وطن نہیں ہو سکتے

انہوں نے مزید کہا کہ اگر سیاست ہی کرنی ہے تو اپنی شہ رگ کشمیر کی حمائت وآزاری اور بھارتی افواج کے قتل عام و مظالم کے خلاف جلسے اور جلوس کئے جاہیں اس پر تو کوئی سیاسی جماعت آواز ہی نہیں بلند کر رہی اور محض اقتدار کے حصول کےلئے اوچھل کود جاری ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں