لنڈی کوتل پریس کلب کے زیر اہتمام باڑہ کے صحافی خادم آفریدی کی رہائی کیلئے باچاخان چوک میں احتجاجی مظاہرہ

لنڈی کوتل( ہجرت علی آفریدی سے) لنڈی کوتل پریس کلب کے زیر اہتمام باڑہ کے صحافی خادم آفریدی کی رہائی کیلئے باچاخان چوک میں احتجاجی مظاہرہ ہوا. جس میں لنڈی کوتل پریس کلب کے ممبران کے علاوہ خیبر سیاسی اتحاد کے رہنماؤں سید مقتدر شاہ آفریدی، شاہ خالد شینواری، ساجد آفریدی، شاکرآفریدی ،اکرام پٹھان، کلیم شینواری، ابودردا شینواری ،ہمیش کرسچن، کمیونٹی کے راشد کے علاوہ سول سوسائٹی کے نمائندوں نے بھی شرکت کی .

احتجاجی مظاہرے میں صحافیوں نے سی ٹی ڈی کی غنڈہ گردی کے خلاف نعرے بازی کی اور خادم آفریدی کی فوری رہائی کا مطالبہ کیا،.صحافیوں نے پلے کارڈز اٹھا رکھے تھے .جن پر خادم آفریدی کی رہائی اور صحافت پر قدغن کے خلاف نعرے درج تھے.

سیاسی قائدین نے اپنے خطابات میں کہا کہ خادم آفریدی کی گرفتاری آزادی اظہار رائے پر پابندی کے مترادف ہے. خادم آفریدی کو حق اور سچ لکھنے کی سزا دی جا رہی ہے. جس کی سیاسی اتحاد مزمت کرتی ہے مظاہرین نے مطالبہ کیا کہ خادم آفریدی کو فوری رہا کیا جائے. بصورت دیگر وہ احتجاجی تحریک کا سلسلہ جاری رکھیں گے اور پاک افغان شاہراہ کو بھی بند کرینگے . مظاہرین نے باچاخان چوک سے لنڈی کوتل پریس کلب تک ریلی بھی نکالی اور نعرے بازی کی.

اپنا تبصرہ بھیجیں