قائداعظم یونیورسٹی کشمیری طلباء پرتشدد ،اسلام آباد میں مقیم کشمیری کمیونٹی کا پریس کلب کے سامنے اکٹھ

اسلام آباد (سٹیٹ ویوز)گذشتہ دنوں قائد اعظم یونیورسٹی میں پنجاب سٹوڈنٹس کونسل کی جانب سے جموں کشمیر اسٹوڈنٹس کونسل کے ممبران اور طلباء پر بہیمانہ تشدد، مار دھاڑ اور مظالم کیے گئے جس میں آزاد جموں کشمیر کے طلباء بری طرح زخمی ہوئے۔ اس دوران آزاد ریاست جموں کشمیر کے قومی جھنڈے کی توہین کی گئی، کمروں میں سیاسی و حریت قائدین کی تصویروں کو پھاڑ کر بدترین منافرت پھیلانے کی کوشش کی گئی۔

اس حوالہ سے آج مورخہ 26 جون کو اسلام آباد نیشنل پریس کلب کے سامنے احتجاجی مظاہرہ کیا گیا۔ جس میں کشمیری طلباء پر بدترین تشدد کی بھرپور مذمت کی گئی، کشمیری پرچم کی بر حرمتی کی شدید اور دوٹوک الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے اس عمل کو ریاستی تشخص کی پامالی اور پاکستان و جموں کشمیر کی عوام کے درمیان خلیج پیدا کرنے کی سازش قرار دیا۔ اور واضح کیا گیا کہ اس جرم میں ملوث افراد کے خلاف قانونی کاروائی کرتے ہوئے انہیں قرار واقعی سزا دی جائے۔ اور کشمیری طلباء کو انصاف و تحفظ فراہم کرنے کا مطالبہ کیا گیا۔

مقررین نے اپنے خطابات میں کہا ہے کہ ان اقدام سے پوری ریاست کے عوام کے جذبات مجروح ہوئے ہیں اور ہم ریاستی تشخص کے تحفظ کیلئے کوئی دقیقہ فروگزاشت نہیں کریں گے۔

احتجاجی مظاہرے سے سردار سمیع اللہ عباسی بانی وزیراعظم اسٹیٹ یوتھ اسمبلی، خلیق الرحمن سیفی ایڈووکیٹ چئیرمین جموں کشمیر لائرز فورم، چوہدری عمران، رضوان شبیر کیانی ایڈووکیٹ، ماریہ اقبال ترانہ، سردار وقاص جاوید، عامر بشیر انقلابی راہنما پی ایس ایف، سمیر احمد صدیقی راہنما جموں کشمیر لبریشن لیگ، سردار شہروز حمزہ ایڈووکیٹ، عثمان ناصر ایڈووکیٹ اور دیگر نے خطاب کیے

اپنا تبصرہ بھیجیں