فیصل آبادتشددکیس: شیخ دانش علی کی بیٹی کا حفاظتی ضمانت کیلئےعدالت سے رجوع

اسلام آباد : فیصل آباد میں میڈیکل کی طالبہ پر تشدد کرنے والی ملزم شیخ دانش علی کی بیٹی اناعلی نے حفاظتی ضمانت کیلئے ہائی کورٹ سے رجوع کرلیا۔تفصیلات کے مطابق فیصل آباد میں لڑکی پرتشدد کیس میں ملزم شیخ دانش علی کی بیٹی اناعلی نے حفاظتی ضمانت کیلئے اسلام آباد ہائی کورٹ میں درخواست دائرکردی۔

درخواست میں کہا گیا کہ کم عمرہوں پولیس کی جانب سےگرفتاری کاخدشہ ہے ، جائے وقوعہ پر موجود بھی نہیں تھی مگرمقدمےمیں نامزد کیاگیا۔درخواست میں کہنا تھا کہ بیرونی پریشرپرپولیس مجھےگرفتارکرناچاہتی ہے، تسلیم شدہ اصول ہےجرم ثابت ہونےتک کوئی بھی معصوم ہی تصور ہوگا، متعلقہ عدالت میں پیش ہونا چاہتی ہوں حفاظتی ضمانت دی جائے۔

بعد ازاں اسلام آباد ہائی کورٹ میں شیخ دانش علی کی بیٹی کی حفاظتی ضمانت کی درخواست پر سماعت ہوئی۔عدالت نے وکیل سے استفسار کیا مقدمہ فیصل آباد میں درج ہواہے ؟ یہ آپ نےزیادتی کی ضمانت کیلئےاسلام آباد آگئے۔

عدالت کا کہنا تھا کہ ایسا کیوں ہوتا ہے جب بھی ایف آئی آر ہوتی ہے وہ اسلام آباد آجاتا ہے، کارڈ پر عارضی اورمستقل پتہ فیصل آباد ہے بس درخواست پر اسلام آباد لکھاہے۔وکیل درخواست گزار نے بتایا کہ درخواست گزار والدہ کیساتھ اسلام آباد میں رہائش پذیر ہے، جس پر عدالت نے کیاکہ اگر اسلام آباد رہ رہی ہیں تو غلط پتہ کیوں لکھا ہے؟

عدالت نے وکیل پر برہمی کا اظہار کرتے ہوئے کہا آپ ہی لوگ ہیں جو قانون کو ڈاؤن کرنے کی کوشش کرتے ہیں،اللہ کے واسطے کوئی کسی پر الزام نہیں لگاتے، کچھ ہوگا تو الزام ہوگا۔درخواست گزار نے کہا گھومنے اسلام آباد آئی ہوں تو سوچا کہ چلیں عدالت سے ضمانت بھی کرلیں۔جس پر عدالت نے پیر تک اسلام آباد میں رہائش کا ثبوت دینے کی ہدایت کرتے ہوئے انا علی کی حفاظتی ضمانت کی درخواست پر سماعت پیر تک ملتوی کردی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں