بلدیاتی الیکشن کا آخری مرحلہ: میرپور ڈویثرن میں حکمران جماعت تحریک انصاف کو میرپور، کوٹلی اور بھمبر میں پی ڈی ایم پر واضح برتری

اسلام آباد، میرپور، کوٹلی، بھمبر(سید فیصل علی، نمائندگان سٹیٹ ویوز)آزاد کشمیر بلدیاتی انتخابات کا تیسرا مرحلہ بھی پر امن طریقے سے اختتام کوپہنچا،الیکشن کمیشن کے مطابق ووٹرز کا ٹرن آوٹ بہترین رہا ،تیسرے مرحلے میں میرپور ڈویژن میں پولنگ کے بعدنتائج آنے کا سلسلہ جاری ہے ،غیر حتمی اور غیر سرکاری نتائج کے مطابق پاکستان تحریک انصاف کے امیدواروں نے ن لیگ، پیپلز پارٹی کےمقابلے میں میدان مارلیا ہے اور پی ٹی آئی امیدوار تینوں اضلاع اور میونسپل کارپوریشنز میں سب سے آگے ہیں جبکہ کامیاب ہونے والوں میں آزاد امیدواروں کی بڑی تعداد شامل ہے، ن لیگ دویثرن بھر میں دوسرے نمبر کی سیاسی جماعت بن کر سامنے آرہی ہے۔

غیر حتمی اور غیر سرکاری نتائج کے مطابق میونسپل کارپوریشن میرپور کی 2 یونین کونسلوں اور 46 واڈز پر مشتمل میرپور شہر کے حلقہ 45 کے نتائج کے مطابق 23 پر پی ٹی آئی، 13 ن لیگ،5 آزاد، ایک پیپلز پارٹی اور ایک پر مسلم کانفرنس کے امیدوار کامیاب قرار پائے ہیں جبکہ میرپور شہر کی دو یونین کونسلوں میں سے ایک پر پی ٹی آئی کامیاب قرار پائی ہے اور دوسری کا رزلٹ آنا باقی ہے۔ ضلع میرپور کا حلقہ چک سواری کی 6 یونین کونسلوں اور 2 میونسپل کمیٹیوں پر مشتمل ہے۔ میونسپل کمیٹی چکسواری کی 11 واڈز میں سے 7 پر پیپلز پارٹی اور 4پر پی ٹی آئی کامیاب ہوئی ہے جبکہ 6 یونین کونسلوں میں سے 3 پر پی ٹی آئی اور 3 پر پیپلز پارٹی کامیاب قرار پائی ہے۔ضلع میرپور کا حلقہ ڈڈیال کی 9 یونین کونسلوں اور ایک میونسپل کمیٹی پر مشتمل ہے۔ میونسپل کمیٹی کی 6 وارڈز میں سے پانچ پر آزاد امیدوار اور ایک پر پی ٹی آئی کامیاب ہوئی ہے جبکہ 9 یونین کونسلوں میں سے 8 پی ٹی آئی اور ایک پر ن لیگ کامیاب قرار پائی ہے۔ضلع میرپور کا حلقہ کھڑی شریف10 یونین کونسلوں پر مشتمل ہے جن میں سے پی ٹی آئی 8 اور 2 پر ن لیگ کامیاب قرار پائی ہے۔

ضلع بھمبر کا حلقہ بھمبر شہر 11 یونین کونسلوں اور ایک میونسپل کمیٹی پر مشتمل ہے، میونسپل کمیٹی کی 8 وارڈز میں سے 4 پر پی ٹی آئی اور 4 پر ن لیگ کامیاب قرار پائی جبکہ 11یونین کونسلوں میں سے پی ٹی آئی 6، ن لیگ 4 اور ایک پر آزاد امیدوار کامیاب ہوا ہے۔بھمبر کا حلقہ سماہنی 10 یونین کونسلوں اور ایک ٹاؤن کمیٹی پر مشتمل ہے، ٹاؤن کی 2 وارڈ میں سے ایک پر آزاد امیدوار جبکہ دوسری وارڈز پر امیدواروں کا مقابلہ برابر قرار پایا۔بھمبر کے سماہنی حلقہ کی 10 یونین کونسلوں میں سے 7 کے نتائج پر پی ٹی آئی 3، ن لیگ ایک اور 3 پر آزاد امیدوار کامیاب ہوئے ہیں۔ بھمبر کے برنالہ حلقے میں ضلع کونسل اور تاون کمیٹیوں میں پی ٹی آئی ایک سیٹ بھی نہ جیت سکی، ن لیگ نے واضح اکثریت حاصل کر لی.

میونسپل کارپوریشن کوٹلی کی 14وارڈ سے مجموعی طور پر پاکستان تحریک انصاف نے 5 آزاد امیدواروں نے 5 جبکہ پاکستان پیپلز پارٹی نے 1 سیٹ اور مسلم لیگ ن نے 3 سیٹیں حاصل کیں۔ضلع کوٹلی میں کل 56 یونین کونسلز ہیں، کوٹلی کے نکیال حلقے میں 8 یونین کونسلز میں سے 4 ن لیگ، 3 پیپلز پارٹی اور ایک پر پی ٹی آئی جیت سکی، نکیال ٹاون کمیٹی کی دونوں سیٹوں پر ن لیگ کامیاب. ضلع کوٹلی میں چڑھوئی حلقہ کی یونین کونسل خانکہ کوٹہڑہ سے ن لیگ کے راجہ کامران ڈسٹرکٹ کونسلر کامیاب،میونسپل کمیٹی چڑھوئی کی دونوں وارڈز میں ن لیگ کے راجہ وقاص سلیم اور نمبردار سلطان آزاد کونسلر منتخب، دونوں کا ن لیگ سے تعلق ہے،دولیاں جٹاں اور نکیال میں پیپلز پارٹی آگے ہے۔

کھوئی رٹہ کوٹلی میں معاون خصوصی اطلاعات چوہدری محمد رفیق نئیر کے صاحبزادے انیق احمد نئیر یونین کونسل اندرلہ کٹہڑہ سے 1545 ووٹ لیکر ممبر ضلع کونسل منتخب ہو گئے، راج محل تتہ پانی حلقہ کی یوسی تتہ پانی ساوڑ سے ممبر ضلع کونسل کے تمام پولنگ اسٹیشنزکا غیر حتمی غیر سرکاری نتیجہ سامنے آیا جس کے مطابق آزاد امیدوار سابق چیئرمین جموں کشمیر سٹوڈنٹس لبریشن فرنٹ عبدالرحیم ملک 1866 ووٹ لیکر ممبر ضلع کونسل منتخب ،تحریک انصاف کے امیدوار اسد علی ناز 1622ووٹ لیکر دوسرے نمبر پر رہے

اپنا تبصرہ بھیجیں