انگلی کے ذریعے بلڈ پریشر چیک کرناممکن ہو گیا

بلڈ پریشر میں اضافہ یا کمی دونوں صحت کے لیے تباہ کن مانے جاتے ہیں۔عام طور پر بلڈ پریشر کو چیک کرنے کے لیے مخصوص مشین کا استعمال کیا جاتا ہے جس کا کف بازو کے مخصوص حصے پر چڑھا کر ریڈنگ حاصل کی جاتی ہے۔مگر اب دنیا کا پہلا کف لیس بلڈ پریشر مانیٹر تیار ہوا ہے جس پر محض انگلی رکھ کر ہی بلڈ پریشر ریڈنگ جاننا ممکن ہے۔

ویلنسیل نامی کمپنی نے اس بلڈ پریشر مانیٹر کو تیار کیا ہے جسے لاس ویگاس میں کنزیومر الیکٹرونکس شو کے موقع پر پیش کیا گیا۔کمپنی کے مطابق بازو کے اوپری حصے پر کف لگانے کی بجائے اس مانیٹر سے بلڈ پریشر کو فنگرٹپ کلپ سے جاننا ممکن ہے۔

عام طور پر اس طرح کا طریقہ کار ابھی دل کی دھڑکن کی رفتار جاننے کے لیے استعمال کیا جاتا ہے مگر اس سے بلڈ پریشر جاننا بہت آسان ہوجائے گا۔اس ڈیوائس کو ابھی یو ایس فوڈ اینڈ ڈرگ ایڈمنسٹریشن نے منظوری نہیں دی مگر کمپنی نے کہا کہ ڈیوائس میں موجود سنسرز خون کے بہاؤ کی جانچ پڑتال کرتے ہیں۔

بعد ازاں یہ تفصیلات ایک الگورتھم تک پہنچتی ہیں جو مختلف عناصر کو مدنظر رکھ بلڈ پریشر ریڈنگ بتاتا ہے۔ڈیوائس کے سنسرز کو تربیت کے لیے ہائی بلڈ پریشر کے 7 ہزار مریضوں کا ڈیٹا فراہم کیا گیا تھا۔
ڈیوائس میں خون کے انقباضی دباؤ (Systolic blood pressure) اور انبساطی دباؤ (diastolic blood pressure) کے نمبر اسکرین پر نظر آنے لگتے ہیں اور موبائل ایپ پر بھی فراہم کیے جاتے ہیں۔

کمپنی کو توقع ہے کہ اس ڈیوائس سے ہائی بلڈ پریشر کے خلاف جنگ میں کامیابی ممکن ہوسکے گی جبکہ ہر جگہ اسے آسانی سے استعمال کیا جاسکے گا۔اس کی قیمت 99 ڈالرز رکھی گئی ہے مگر اس کی فروخت طبی ریگولیٹرز کی منظوری کے بعد شروع ہوگی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں