آٹے کے بعد جان بچانے والی ادویات کو بھی مہنگا کرنے کی تیاری کر لی گئی

ڈرگ ریگولیٹری اتھارٹی (ڈریپ) نے 110 سے زائد دواؤں کی قیمتوں میں اضافےکی سفارش کی ہے۔وفاقی وزارت صحت کے مطابق پاکستان میں کینسر، نفسیاتی امراض اور اعضا کی پیوند کاری سمیت جان بچانے والی ادویات کی قلت ہے، قیمتوں میں اضافہ نہ ہونے سے کمپنیوں نے ادویات بنانا بندکردی ہیں۔

وفاقی وزارت صحت کا کہنا ہےکہ ڈریپ نے 110 سے زائد دواؤں کی قیمتوں میں اضافےکی سفارش کی ہے، ڈریپ نے قیمتوں میں اضافےکی سفارش اسلام آباد ہائی کورٹ کے حکم کے بعدکی ہے۔وفاقی وزارت صحت کے حکام کا کہنا ہے کہ ڈریپ کو 400 سے زائد ادویات کی قیمتوں میں اضافے کی درخواستیں موصول ہوئیں، ملک میں اینستھیزیا کےعلاوہ دیگربیماریوں کےعلاج کی ادویات کی بھی قلت ہے، قیمتیں نہ بڑھائی گئیں توخدشہ ہے کہ فارما کمپنیاں یہ ادویات بنانا اور باہر سے منگوانا بندکردیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں