مسلم ڈاکٹر نے شرم و حیا کی دھجیاں بکھیر دیں

نیویارک(ویب ڈیسک)امریکہ میں ایک بھارتی نژادمسلم ڈاکٹراوراسکی بیوی کوایک ایسے شرمناک الزام میں گرفتارکرلیاگیاہے.
جس الزام کے تحت امریکی تاریخ میں کبھی کسی کوگرفتارنہیں کیاگیا۔رپورٹ کے مطابق امریکی ریاست مشی گن کے رہائشی 53سالہ ڈاکٹرفخرالدین عطاراوراس کی 50سالہ بیوی فریدہ عطارکم عمرلڑکیوں کے ختنے کرنے میں ملوث تھے یہ ایک ایساکام ہے جسے امریکہ میں غیرقانونی قراردیاجاچکاہے ۔ان رپورٹ کے مطابق ان کے ساتھ اس جرم میں ایک ہندو خاتون ڈاکٹر44سالہ جمنانگروالابھی ملوث تھی.

ان تینوں کے خلاف کم عمرلڑکیوں کے ختنے کرنے کے الزام کے تحت مقدمہ درج کرلیاگیاہے۔یادرہے کہ فخرالدین نے 1988میں بھارت کے شہرگجرات کے برمودامیڈیکلک کالج سے ڈگری لی تھی اوربعدازاں امریکہ منتقل ہوگیاتھاجبکہ اس کی بیوی بی ایم ایس میں آفس منیجرکے طورکرکام کرتی تھی۔

کیٹاگری میں : صحت