دھیرکوٹ:تحریک انصاف کےکارکن ظفرعباسی کےخلاف ایف آئی آردرج، عبوری ضمانت منظور

اسلام آباد (سپیشل رپورٹر/سٹیٹ ویوز) آزادکشمیر کے انتخابی حلقے غربی باغ کےدبئی میں تحریک انصاف کے ظفرعباسی نامی کارکن کےخلاف پولیس تھانہ دھیرکوٹ میں انعام الحق کی جانب سے اقدام قتل کا مقدمہ درج کرلیاگیا جبکہ ملزم نےقبل ازگرفتاری تین دن کی عبوری ضمانت منظورکرالی۔

پولیس تھانہ دھیرکوٹ میں درج ایف آئی آر کے مطابق انعام الحق کا کہناہےکہ چمیاٹی سے تعلق رکھنے والےمیرےبہنوئی شبیرعباسی کے ساتھ ظفر عباسی کااراضی کا تنازعہ چل رہا تھا جس پر بات چیت کیلئے ظفرعباسی نے انہیں دھیرکوٹ میں بزرگ سیاسی رہنما راجہ شمشاد کےگھربلایا جہاں وہ اپنے ساتھیوں کےہمراہ موجودتھے۔
FIR against zafar abbasi image
دوران گفتگو انہوں نےجھگڑا شروع کردیا اورموقع ملتے ہی چشم دید گواہان کی موجودگی میں کانچ کا گلاس میرےسر پردےمارا جس سے میں شدیدزخمی ہوگیاجبکہ انکے ساتھیوں نےمارپیٹ کرکے مجھے جان سے مارناچاہا۔ پولیس نےانعام الحق کی درخواست پر اقدام قتل سے متعلق دفعات کے تحت ایف آئی آردرج کرکےظفرعباسی کی گرفتاری کیلئےان کےگھر اوردیگر جگہوں پرجہاں وہ موجود ہوسکتے تھے چھاپےمارے لیکن وہ پولیس کے ہاتھ نہ آئے اور مظفرآباد سے جاکرتین دن کی عبوری ضمانت حاصل کرلی۔بتایاجاتا ہے کہ ظفر عباسی نے کراس ایف آئی آر کے لئےکوشش کی تھی مگروہ اس میں کامیاب نہ ہوسکےتھے.

سٹیٹ ویوز نے اس حوالے سے ظفر عباسی سے انکاموقف جاننےکیلئے رابطہ کیا تو انہوں نے ایف۔آئی-آر کے مندرجات کےجھوٹ یاسچ ہونے بارے جواب دینے کی بجائے یہ کہا کہ وہ سٹیٹ ویوز کےیکطرفہ خبر کرنے پر کاروائی کریں گے۔ان سے پوچھاگیا کہ آپ نے تین روزہ عبوری ضمانت حاصل کی ہے یا نہیں تو انہوں نے کہا کہ اس بارے میں وہ نہیں بتاسکتے۔